پی ڈی ایم جلسہ: مولانا فضل الرحمان کا لانگ مارچ کا اعلان

لاہور: اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک مومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے اعلان کیا ہے کہ جنوری کے آخر یا فروری کے آغاز میں اسلام آباد لانگ مارچ کریں گے۔

مینار پاکستان لاہور میں پی ڈیم اے کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ اسلام آباد پہنچ کر حکومت کو چلنے نہیں دیں گے،ان کے استعفے ساتھ لے کر جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ عوام کو روکیں نہیں، انارکی کی طرف جانے سے پہلے حالات سنبھال لینے چاہیں۔ دھاندلی کے ذریعے مسلط جعلی حکومت کو تسلیم نہیں کرتے۔

مریم نواز کی موجودگی: محمود خان اچکزئی نے لاہوریوں کی توہین کردی

ان کا کہنا تھا کہ ‏فقید المثال اجتماع پر پی ڈی ایم کی جماعتوں اورعوام کومبارکباد پیش کرتا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ پچھلے سال لاہور کی شاہراہوں سے ہمارا آزادی مارچ گزررہا تھا، آپ نے ساری رات ہمارے استقبال میں کھڑے ہو کر گزاری تھی۔

ڈائیلاگ کا وقت گزر چکا اب لانگ مارچ ہو گا، بلاول بھٹو

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ پاکستان میں ناجائزحکومت مسلط ہے، ناجائز حکومت کیلئے دھاندلی کی گئی تھی۔

ان کا کہنا تھا کہ عوام کے حقوق پر ڈاکا ڈالا جاتا ہے تو قومی یکجہتی برقرار نہیں رہ سکتی، زخم گہرے ہوتے جا رہے ہیں،احساسات میں غصے،ناراضی کاعنصر بڑھ رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ آج ملک کے ہر شعبہ ہائے زندگی کے لوگ پریشان ہیں۔ اگر ہم نے ان لوگوں کو مطمئن کرنا ہے تو انقلاب برپا کرنا ہو گا۔

سربراہ پی ڈی ایم نے کہا کہ پاکستان کا اسٹیٹ بینک بیان دے رہا ملکی تاریخ میں پہلے بار بجٹ زیرو سے نیچے چلا گیا، معیشت کی ابتری غریب بے روزگار نوجوان کو سبز باغ دکھائے اس کے مستقبل کو تاریک کر دیا۔

ان کا کہنا تھا کہ سرکاری اداروں سے تیس ہزار سے زائد ملازمین فارغ کر دئیے، حکومت نااہل و ناجائز ہے تو اسے برقرار رکھنے کیلئے جنات نے نہیں قوم نے کردار ادا کرنا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز