اسلام آباد پولیس جاں بحق ہونے والے نوجوان کیخلاف 2 مقدمات سامنے لے آئی

اسلام آباد پولیس جاں بحق ہونے والے نوجوان کیخلاف 2 مقدمات سامنے لے آئی

اسلام آباد: اسلام آباد پولیس انسداد دہشت گردی اسکواڈ (اے ٹی ایس) کے اہلکاروں کی فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے نوجوان اسامہ ستی کے خلاف 2 مقدمات سامنے لے آئی ہے۔

اسلام آباد پولیس کے مطابق اسامہ ستی کے خلاف 6 گرام منشیات برآمد کا مقدمہ تھانہ رمنا میں درج ہوا تھا۔ نوجوان کے خلاف تھانہ سیکریٹریٹ میں ٹیمپرڈ گاڑی استعمال کرنے کا مقدمہ بھی درج ہو اتھا۔ اسامہ ستی کے خلاف دونوں مقدمات 2018 میں درج کیے گئے تھے۔

مزید پڑھیں: اسلام آباد: پولیس اہلکاروں کی فائرنگ سے نوجوان جاں بحق، 5 اہلکار گرفتار

اس سے قبل پولیس نے ڈکیتی کی کال پر گاڑی کے تعاقب اور نہ رکنے پر فائرنگ کا مؤقف دیا تھا۔ واقعے میں ملوث 5 پولیس اہلکاروں کو معطل گرفتار کیا گیا ہے۔

اس سے قبل ترجمان پولیس  نے کہا تھا کہ رات کو اطلاع ملی کہ گاڑی میں ڈاکو شمس کالونی میں ڈکیتی کی کوشش کر رہے ہیں۔ اے ٹی ایس پولیس کے اہلکار علاقہ میں گشت پر تھے جنہوں نے مشکوک گاڑی کا تعاقب کیا۔

کالے شیشوں والی مشکوک گاڑی کو روکنے کی کوشش کی گئی تو ڈرائیور نے گاڑی نہ روکی۔ پولیس نے متعدد بار جی ٹین تک گاڑی کا تعاقب کیا اور نہ رکنے پر ٹائرز پر فائر کیے تاہم فائر گاڑی کے ڈرائیور کو لگی جس سے اس کی موت ہوئی۔

آئی جی اسلام آباد نے واقعے کا نوٹس لیا اور ایس ایس پی سی ٹی ڈی کی سربراہی میں ایس پی صدر اور ایس پی انویسٹی پر مشتمل ٹیمیں تشکیل دیں۔

متعلقہ خبریں