سانحہ مچھ کے شہدا آہوں اور سسکیوں میں سپرد خاک

سانحہ مچھ کے شہدا سپرد خاک

فوٹو: فائل

کوئٹہ: سانحہ مچھ کے شہدا کو سپرد خاک کر دیا گیا۔ وفاقی وزیرعلی زیدی،زلفی بخاری،قاسم سوری سمیت صوبائی وزرا اور شہریوں کی بڑی تعداد  کی نماز جنازہ میں شرکت کی۔

افغانستان سے دوبارہ درخواست  نہ آنے پر افغان شہریوں کی بھی تدفین کر دی گئی۔ 

سانحہ مچھ کے شہدا کی تدفین کے بعد وزیراعظم عمران خان نے کوئٹہ میں ہزارہ برادری سے ملاقات کی اور سانحہ مچھ پر اظہار تعزیت کیا۔

یہ بھی پڑھیں: سانحہ مچھ کے متاثرین سے حکومت کے مذاکرات کامیاب 

وزیراعظم عمران خان سردار بہادر خان وومن یونیورسٹی کوئٹہ سے اسلام آباد کے لیے روانہ ہو گئے ہیں، گورنر اور وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال بھی وزیراعظم کے ہمراہ تھے۔

ہزارہ برادری سے ملاقات کے دوران وزیر داخلہ شیخ رشید اور دیگر حکام بھی وزیراعظم عمران خان کے ہمراہ تھے۔

دورہ کوئٹہ میں وزیر اعظم عمران خان کی  زیر صدارت کوئٹہ میں امن و امان کے متعلق اجلاس ہوا جس میں وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد، گورنر اور وزیراعلیٰ بلوچستان سمیت اعلیٰ قیادت نے شرکت کی۔

اجلاس میں وزیراعظم کو سانحہ مچھ پر بریفنگ دی گئی اور صوبہ کے امن و امان کی مجموعی صورتحال سے آگاہ کیا گیا۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ بھی  جلد کوئٹہ کا  دورہ کریں گے۔

قبل ازیں وزیر اعظم  عمران خان سے گورنر بلوچستان امان اللہ خان یاسین زئی اور وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے ملاقات کی۔ ملاقات میں کمانڈر سدرن کمانڈ لیفٹیننٹ جنرل سرفراز علی بھی موجود تھے۔ 

وزیر اعظم عمران خان آج دن کو کوئٹہ  پہنچے تھے۔ وزیرداخلہ شیخ رشید بھی ان کے ہمراہ تھے۔

یہ بھی پڑھیں: وزیر اعظم عمران خان کی ہزارہ برادری سے ملاقات

گزشتہ روز سانحہ مچھ کے متاثرین سے حکومت کے مذاکرات کامیاب ہو گئے تھے اور مظاہرین شہدا کی تدفین کے لیے رضامند ہو گئے تھے۔ مظاہرین کی جانب سے اعلان کیا گیا تھا کہ حکومت نے تمام مطالبات مان لیے ہیں۔

وفاقی وزیر علی زیدی نے دھرنے کے شرکا سے خطاب میں کہا کہ کئی سالوں سے ہزارہ برادری پر جاری مظالم کو ختم کرنا ہو گا۔ 

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز