بیوروکریسی اور سول سروسز اصلاحات میں اہم پیش رفت


اسلام آباد: وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا کہ سرکاری ملازمین کی پرموشن میں تبدیلیاں کی گئی ہیں، سرکاری ملازمین کی ترقی تین سال میں کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پنشن والے اداروں میں ریٹائرڈ ملازمین کو پنشن ملتی رہے گی۔

انہوں نے کہا کہ اگر ملازم کا ریفرنس نیب یا ایف آئی اے میں ہوا تو اسے پروموٹ نہیں کیا جائیگا، انکوائری کو 3 سال ہوجائیں تو پروموشن کی اجازت ہو گی۔

سرکاری ملازمین کے مسائل: وزیراعظم نے کمیٹی تشکیل دے دی

شفقت محمود ان کا کہنا تھا کہ پلی بار گین کرنے والے ملازم  کے خلاف بھی ایکشن ہو گا، ریٹائرمنٹ کی عمر کی حد کم کرنے کی کوئی تجویز نہیں، پنشن والے اداروں کے ملازمین کو پنشن ملے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ الزام زیادہ ہونے پر ایک ہی انکوائری ہو گی، صوبوں میں کام کرنے والے افسران کی انکوائری اب اسٹیبلشمنٹ ڈویژن بھی کر سکتی ہے۔

وفاقی وزیر کا مزید کہنا تھا کہ روٹیشن پالیسی کے تحت ایک ہی صوبے میں دس سال سے زیادہ افسر نہیں تعینات رہ سکے گا

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز