امریکہ: جوبائیڈن نے وائٹ ہاؤس میں کام کرنے کی شرط عائد کردی

امریکہ: جوبائیڈن نے وائٹ ہاؤس میں کام کرنے کی شرط عائد کردی

واشنگٹن: امریکہ کے نو منتخب صدر جوبائیڈن نے وائٹ ہاؤس میں ایک ہزار سے زائد سیاسی معاونین کی تقرریاں کرنے کا اعلان کرتے ہوئے واضح طور پر کہا ہے کہ اگر کسی نے اونچی آواز میں بات کی اور یا پھر بدتمیزی کی تو موقع پر ہی ملازمت سے برطرف کردوں گا۔

نفرت، تعصب، نسل پرستی اور انتہا پسندی کامقابلہ کرنا ہے: جوبائیڈن

امریکی ذرائع ابلاغ کے مطابق جوبائیڈن نے جوبائیڈن نے یہ ہدایت وائٹ ہاؤس کے ملازمین سے ورچوئل ملاقات کے دوران دی۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر آپ میرے ساتھ ہمیشہ کام کرنا چاہتے ہیں تو یہ بہت آسان ہے۔ انہوں نے کہا کہ  آپ کو اپنے ساتھیوں کے ساتھ عزت سے پیش آنا ہے اور اُن سے نرم لہجے میں گفتگو کرنا ہے۔

جوبائیڈن نے ہنگامہ آرائی کو بغاوت قرار دے دیا

امریکہ کے نو منتخب صدر نے اپنی پہلی ورچوئل میٹنگ میں کہا کہ اگر کسی نے اونچی آواز سے بات کی اوریا کوئی بدتمیزی کی تو میں آپ کو موقع پر ہی ملازمت سے برطرف کردوں گا۔

صدر جوبائیڈن نے ملازمین کو واضح طور پر ہدایات دیں کہ ایک دوسرے کی عزت کریں اور نرمی سے پیش آئیں۔

جوبائیڈن نے ٹرمپ کی متنازعہ پالیسیاں تبدیل کر دیں

ذرائع ابلاغ کے مطابق صدر جوبائیڈن نے عہدے کا حلف اٹھانے کے بعد مسلمانوں پر سفری پابندی، طبی مسائل اور ماحولیاتی تبدیلیوں کے حوالے سے 15 صدارتی حکم ناموں پر دستخط کیے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز