بھارت میں کسانوں کے احتجاج نے مودی سرکار کے ہوش اڑا دیے

بھارت میں کسانوں کے احتجاج نے مودی سرکار کے ہوش اڑا دیے

فائل فوٹو

نئی دہلی: بھارت میں مودی حکومت کے زرعی قوانین کے خلاف کسانوں کا احتجاج جاری ہے۔ 26 جنوری کو دلی کی طرف ٹریکٹر مارچ کی تیاریاں آخری مراحل میں داخل ہوگئیں۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق بھارت میں کسانوں کے احتجاج نے مودی سرکار کے ہوش اڑا دیے۔ خوف کا شکار حکومت نے ہریانہ پولیس کی چھٹیاں منسوخ کر دیں۔

کسانوں کی جانب سے 26 جنوری کو دلی کی طرف ٹریکٹر مارچ کا اعلان کیا گیا تھا جس کی تیاریاں بھی آخری مراحل میں داخل ہو گئیں۔

ہریانہ، راجستھان اور پنجاب سمیت متعدد ریاستوں کے مظاہرین کا کہنا ہے کہ مودی سرکار کو ٹف ٹائم دینے کے پوری تیاریاں کر لی گئی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: بھارتی یوم جمہوریہ سے دو دن پہلے دلی ’’پاکستان زندہ باد‘‘ کے نعروں سے گونج اٹھا

دوسری جانب دہلی میں کسانوں نے مظاہرے سے پکڑے جانے والا “را” کا دہشت گرد میڈیا کے سامنے پیش کر دیا۔ گرفتار شخص کے مطابق پولیس اور ایجنسیوں نے چار کسان رہنماؤں کے قتل کا ٹاسک دیا تھا جبکہ پولیس نے احتجاج کرنے والوں پر ڈنڈے برسائے اور سخت سردی میں واٹر کینن کا بھی استعمال کیا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز