خیبرپختونخوا حکومت کا پشاور کے ’چارلی چپلن‘ کو ملازمت دینے کا اعلان

خیبرپختونخوا حکومت نے پشاور کے ’ چارلی چپلن‘ کو ملازمت دینے کا اعلان کر دیا۔

اس حوالے سے صوبائی وزیر ثقافت ومحنت شوکت یوسفزئی نے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ محمود خان کی منظوری کے بعد محمد عثمان کو ملازمت کی پیش کش کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ محمد عثمان نے معروف چارلی چپلن کا کردار دوبارہ زندہ کر دیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ملازمت کی پیش کش پشاور چارلی چپلن کے لئے ایک تحفہ ہے،ملازمت کے بعد محمد عثمان اپنے فن پر زیادہ توجہ دے سکیں گے۔

یاد رہے کہ گزشتہ دنوں ہم نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے پشاوری چارلی چپلن محمد عثمان نے بتایا تھا کہ بچپن سے ہی چارلی چپلن کی ویڈیوز دیکھتا تھا اور مجھے شوق تھا کہ میں بھی پاکستانی چارلی چپلن بن جاؤں اور لوگوں ہنساؤں۔

یہ بھی پڑھیں: اداکار جارج کلونی کو وزن کم کرنا مہنگا پڑ گیا، اسپتال منتقل

محمد عثمان کا کہنا تھا کہ جب شروعات کی تو اس وقت کورونا وائرس کی وجہ سے معاشرے میں بہت پریشانی تھی اور سب لوگ گھروں میں قید تھے۔ میں چاہتا تھا کہ میں لوگوں کے چہروں پر مسکرہٹ لاؤں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اگر میری زندگی کے بارے میں لوگ پوچھیں تو میری زندگی بہت عجیب ہے لوگ اگر سنیں میرے بارے میں تو رونے لگیں گے۔

ہم نیوز سے گفتگو کے دوران انہوں نے مزید بتایا کہ جب گھر سے نکلتا ہوں ناں تو اپنی اس زندگی کو میں دروازہ بند کر کے نکل جاتا ہوں اور لوگوں کو ہنسانے میں لگ جاتا ہوں۔

چارلی چپلن کی 130 ویں سالگرہ

محمد عثمان کا کہنا تھا کہ میں چاہتا ہوں کہ اب حکومت بھی میرے ساتھ تعاون کریں کیونکہ کردار تو اٹھا لیا مگر اب سپورٹ کی ضرورت ہے اور آج جو میں ہوں میرے ساتھ ٹیم وررک کا ہی نتیجہ ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ میرے دوست میرے ساتھ بڑی محنت کرتے ہیں، اس صوبے کے لوگوں نے بڑے دکھ درد دیکھے ہیں اب اگر انہیں میری وجہ سے خوشیاں مل رہی ہے تو میں کرنا چاہتا ہوں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز