اسلام آباد: بندروں کا حملہ، وائلڈ لائف کا ملازم زخمی


اسلام آباد کے تفریحی مقام ٹریل 4 پر بندروں نے اسلام آباد وائلڈ لائف منیجمنٹ بورڈ کے ملازم پر حملہ کر کے اسے زخمی کر دیا۔

چیئرمین اسلام آباد وائلڈ لائف منیجمنٹ بورڈ رینا سعید خان کے مطابق بندروں نے اہلکار پر خوراک نہ کھلانے کی وجہ سے حملہ کیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ مارگلہ ہلز کے بندر سیاحوں کی طرف سے کھانا کھلائے جانے کی عادی ہوگئے ہیں۔

تیندوے کی موجودگی کے باعث ٹریل 6 بند 

ان کا کہنا تھا کہ اگر کسی کے پاس کچھ کھلانے کے لیے نہ ہو تو بندر حملہ کردیتے ہیں۔

انہوں نے سیاحوں سے درخواست کی کہ وہ بندروں کو ٹریل اور سڑک پر کھانے کے لیے کچھ نہ دیں، خلاف ورزی کرنے والوں کو جرمانہ کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ چند روز قبل اسلام آباد کا ٹریل 6 تیندوے کی موجودگی کے باعث بند کر دیا گیا تھا۔

چیئرپرسن وائلڈ لائف مینجمنٹ بورڈ رینا خان نے ہم نیوز کو بتایا تھا کہ ٹریل سکس پر مادہ تیندوے کی موجودگی کے باعث اسے ہفتہ اور اتوار کے لیے بند کر دیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: اسلام آباد: شہریوں کو تیندوں سے محتاط رہنے کی ہدایت

ٹریل انتظامیہ کا کہنا تھا کہ  ٹریل پر تیندوے کی نقل و حرکت مسلسل جاری ہے اس لیے ویک اینڈ پر ٹریل کو بند کیا گیا۔ 

وائلڈ لائف مینجمنٹ بورڈ کی چیئر پرسن رینا خان نے شہریوں سے گزارش کی ہے کہ ٹریل 6 پرجانے سے گریز کریں۔

اس سے قبل اسلام آباد وائلڈ لائف مینجمنٹ بورڈ نے شہریوں کو مارگلہ ہلز نیشنل پارک میں تیندوں سے محتاط رہنے اور ٹریل 4 اور 6 پر شام کے وقت نہ جانے کی ہدایت کی تھی۔

چیئر پرسن اسلام آباد وائلڈ لائف مینجمنٹ بورڈ رینا سعید خان کا کہنا تھا کہ گزشتہ شام ٹریلز کے اطراف میں 2 افراد کو دیکھا گیا۔ یہ افراد مادہ تیندوے کے حملے سے بمشکل بچ سکے۔

چیئر پرسن اسلام آباد وائلڈ لائف مینجمنٹ بورڈ کا کہنا تھا کہ سورج غروب ہونے کے بعد ٹریل 4 اور 6 پر جانے والے افراد کی نشاندہی کریں۔

انہوں نے کہا کہ شام کے وقت مارگلہ نیشنل پارک میں جنگلی حیات گھومتے ہیں۔ خلاف ورزی کرنے والوں کو جرمانہ ہوگا اور قانونی کارروائی کا سامنا کرنا پڑے گا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز