چھٹی کیلئے اغوا کا ڈرامہ کیا لیکن نوکری ہی چلی گئی

چھٹی کیلئے اغوا کا ڈرامہ کیا لیکن نوکری ہی چلی گئی

امریکہ کے نوجوان نے کام سے چھٹی کے لیے اغوا کا ڈرامہ رچایا اور پھر نوکری ہی چلی گئی۔

غیر ملکی خبررساں ایجنسی کے مطابق امریکہ کے 19 سالہ نوجوان برینڈن سولز نے کام پر جانے سے بچنے کے لیے اپنا اغوا کا ڈرامہ کیا لیکن دفتر سے مستقل ہی چھٹی مل گئی۔

پولیس کے مطابق ہمیں 19 سالہ نوجوان ملا جس کے ہاتھ پیچھے بندھے ہوئے تھے اور منہ میں کپڑا ٹھونسا ہوا ملا تھا۔ پولیس نے نوجوان کی ہاتھ پاؤں بندھی تصویر جاری کی تو وہ دیکھتے ہی دیکھتے سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی۔

رپورٹ کے مطابق برینڈن سولز نے ابتدائی بیان میں پولیس کو بتایا کہ دو نقاب پوش اغوا کروں نے اس کے سر پر کوئی وزنی چیز ماری جس سے وہ بے ہوش ہو گیا تھا اور وہ اغوا کار اسے گاڑی میں ڈال کر نامعلوم مقام پر لے گئے تھے۔

پولیس کی جانب سے نوجوان سے مزید سوالات کیے گئے تو پولیس کو کچھ شک گزرا جس پر پولیس نے مزید کریدنے کی کوشش کی تو معلوم ہوا کے نوجوان نے دفتر سے چھٹی کے لیے اپنے اغوا کا ڈرامہ کیا۔

یہ بھی پڑھیں: کینسر کو شکست دینے والی لڑکی خلا میں جانے کو تیار

پولیس نے نوجوان کو جھوٹے جرم کی اطلاع دینے پر گرفتار کر لیا اور جب برینڈن سولز کے دفتر تک یہ خبر پہنچی تو اسے ملازمت سے ہی فارغ کر دیا گیا۔

نوجوان کا کہنا تھا کہ اس نے کام پر جانے سے بچنے کے لیے سارا ڈرامہ کیا۔ پہلے خود اپنے منہ میں کپڑا ٹھونسا اور پھر اپنے بیلٹ سے ہی ہاتھ باندھ لیے بعد ازاں پولیس کو واقع کی اطلاع دی۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز