لاہور جانیوالی ٹرین کو حادثہ، 1خاتون جاں بحق، متعددزخمی

سکھر: کراچی سے لاہور جانے والی کراچی ایکسپریس کو حادثہ پیش آیا ہے جس کے نتیجے میں ایک خاتون جاں بحق اور20زخمی ہوگئے ہیں۔

حادثہ روہڑی اور پنوں عاقل کے درمیان منڈو دیرو کے قریب پیش آیا ہے جہاں ٹرین کی دو بوگیاں ٹریک سے اتر گئیں۔ جاں بحق خاتون کی شناخت عظمیٰ کےنام سے ہوئی ہے۔

ٹرین کی بوگیاں الٹ کر قریب واقع تالاب میں گریں۔ ایدھی ذرائع کے مطابق جائے حادثہ پرامدادری سرگرمیاں جاری ہیں۔

ایدھی، پولیس، رینجرز اور ریلوے کی ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچ گئی ہیں۔ حادثے کے باعث اپ ٹریک بلاک متعدد مسافر ٹرینوں کو مختلف اسٹیشنز پر روک دیا گیا ہے۔

ریلوے حکام کا کہنا ہے کہ ریلیف ٹرین جائے وقوعہ پرپہنچ گئی، مسافروں کو روہڑی اسٹیشن منتقل کیا جارہا ہے۔ حادثے کے بعد اپ اینڈ ڈاون ٹریک کو بند کردیا گیا ہے۔

ڈی سی او ریلوے سکھر کامران لاشاری کا کہنا ہے کہحادثے کی وجہ ابھی معلوم نہیں ہوسکی۔ معلومات کیلئے ہیلپ ڈیسک قائم کردیا گیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ ریلوے ٹریک کو کلیئر کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

وزیر ریلوے اعظم سواتی نے ہدایت کی ہے کہ سکھر حادثہ میں جو بھی ذمہ دار ہوا اس کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ شہریوں کی سیفٹی سب سے اہم ہے۔

انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا کہ ریلوے کو اپ گریڈ کرنے کی ضرورت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ابتدائی رپورٹ 4سے 5روز میں مل جائے گی۔ حادثےمیں کسی کی غفلت ہوئی توبرداشت نہیں کیا جائے گا۔

ریلوے حکام کا کہنا ہے کہ کراچی میں ٹرینوں کی آمدو رفت معمول کے مطابق ہے۔ شالیمار ایکسپریس اپنے مقررہ وقت 6بجے لاہور کے لیے روانہ ہوگئی۔ ہزارہ ایکسپریس 6:15منٹ پرروانہ ہوئی ہے۔

پشاور سے آنے والی خیبر میل 6:40 پرپہنچی۔ سکھر ایکسپریس 8بجے کے بعد کراچی پہنچے گی۔ کراچی سے پشاور کے لیے رحمان بابا ایکسپریس10بجے روانہ ہوگی۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز