مریم نواز کی پیشی: نیب لاہور کو ریڈزون ڈیکلیئر کرنے کی درخواست

نیب کی نواز شریف کی ضبط جائیداد سے مریم نواز کا حصہ الگ کرنے کی مخالفت

قومی احتساب بیور (نیب)  نے پاکستان مسلم لیگ نواز کی نائب صدر مریم نواز کی پیشی کے موقع پر نیب لاہور کو ریڈزون ڈیکلیئر کرنے کی درخواست کی ہے۔

ترجمان نیب کے مطابق میڈیا رپورٹس کے مطابق مریم نواز کی پیشی کو سیاسی رنگ دینے کی کوشش کی جارہی ہے۔ ملزمان اور سیاسی جماعتوں کے کارکنوں کی طرف سے نیب لاہورپر چڑھائی کرنے کا پلان بنایا جارہا ہے۔

ترجمان کے مطابق پتھراؤ کرنے اور نیب کو سرکاری فرائض کی انجام دہی میں رکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش کی جاسکتی ہے۔ نیب لاہور قانون کےمطابق تمام آئینی اقدامات کرے گا۔

مزید پڑھیں: مریم نواز کی نیب پیشی پر پی ڈی ایم جماعتوں کا ساتھ جانے کا اعلان

دوسری جانب مریم نواز کی نیب پیشی سے متعلق ن لیگی رہنماؤں کو ذمہ داریاں سونپ دی گئی ہیں۔

ذرائع کے مطابق ن لیگ رہنما رانا ثنااللہ، کھوکھر برادران اور رانا مبشر کو اہم ٹاسک سونپ دیا گیا ہے۔ ملک پرویز، ملک ریاض،علی پرویز ملک، وحید عالم، بلال یاسین،
چودھری شہباز اور باؤ اختر کو بھی ذمہ داریاں دے دی گئی ہیں۔

ذرائع کے مطابق خواتین ارکان اسمبلی اور لیگی خواتین کو لانے کی ذمہ داری شائستہ پرویز ملک کے سپرد کردی گئی ہے۔

ذرائع کے مطابق مریم نواز کی نیب پیشی کی حکمت عملی طے کرنے کے لیے ن لیگ کا اجلاس بدھ کو طلب کرلیا گیا ہے۔ اجلاس کی صدارت نائب صدر مسلم لیگ ن مریم نواز کریں گی۔

خیال رہے کہ نیب نے نائب صدر مسلم لیگ ن مریم نواز کو جاتی امرہ اراضی کیس میں طلب کرلیا ہے۔  نیب نے مریم نواز کو 26 مارچ کو طلب کرلیا ہے۔

نیب کے مطابق مریم نواز کوجاتی عمرا  میں 1500 کنال اراضی کی غیرقانونی منتقلی کی تحقیقات کے لیے بلایا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز