نہر سویز میں پھنسے والا جہاز ضبط،900ملین ڈالرجرمانہ

مصری حکام نے ایورگرین جہاز کو مالی نقصانات کے تنازعہ کے سبب ضبط کرلیا ہے جس نے ایک ہفتے کیلئے نہر سویز کو بند کر دیا تھا۔

مصری عدالت نے بحری جہاز کے جاپانی مالک، شوئی کسین کیشا کو حکم دیا کہ وہ نقصانات کے نتیجے میں 900 ملین ڈالر معاوضہ ادا کرے۔

اس رقم میں نہر کی بحالی کی فیس اور امدادی کاموں کے اخراجات بھی شامل ہیں۔ سوئز کینال اتھارٹی کے مطابق ، تنازعہ حل ہونے تک جہاز کا سامان قبضے میں لے لیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:نہر سوئز، جہاز کی تحقیقات میں بھارتیوں کی گرفتاری کا امکان

گزشتہ ماہ 23 مارچ کو نہر سویز میں جہاز پھنسنے سے400 سے زیادہ جہازوں کو روک دیا گیا تھا۔ اس صورتحال کے نتیجے میں مصری حکام کی جانب سے ابھی بھی الگ تحقیقات کی جارہی ہیں۔

ایک اندازے کے مطابق جہاز پرتقریبا3.5 بلین ڈالر کا سامان ہے جو ایشیا سے یورپ جا رہا تھا۔ جہاز کے مالک کا کہنا ہے کہ انشورنس کمپنیاں اور وکلا معاوضے کے دعوے پر کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے اس پر مزید کوئی تبصرہ کرنے سے انکار کردیا۔

دنیا بھر میں ہونے والی تجارت کا 12 فیصد حصہ سوئز کینال سے ہو کر گزرتا ہے۔ یہ کینال نہ صرف بحیرہ روم اور بحیرہ احمر کو آپس میں جوڑتا ہے بلکہ ایشیا اور یورپ کے درمیان مختصر ترین سمندری راستہ بھی ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز