شہباز شریف کو باہر جانے کی اجازت دینا قانون کیساتھ مذاق ہے، فواد چودھری

مشترکہ مفادات کونسل: مردم شماری کے مسئلے پر دوبارہ اجلاس بلانے کا فیصلہ

فائل فوٹو

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے کہا ہے کہ اربوں روپے کی منی لانڈرنگ میں ملوث شہباز شریف کو باہر جانے کی اجازت دینا قانون کے ساتھ مذاق ہے۔

مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کو باہر جانے کی اجازت ملنے کے فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اتنا جلد فیصلہ تو پنچائیت میں نہیں ہوتا اس طرح سے ان کا فرار ہونا بدقسمتی ہو گی۔

انہوں نے کہا کہ اس سے پہلے وہ نواز شریف کی واپسی کی گارنٹی دے چکے ہیں سوال یہ ہے کہ کہ اس گارنٹی کا کیا بنا؟

فواد چودھری نے کہا کہ فیصلے کے خلاف تمام قانونی راستے اختیار کریں گے۔

شہباز شریف کو مشروط طور پر بیرون ملک جانے کی اجازت

ان کا کہنا تھا کہ ہمارے نظام عدل کی کمزوریوں کی وزیر اعظم کئ بار نشاندہی کر چکے ہیں لیکن اپوزیشن اصلاحات پر تیار نہیں اور اس کی بڑی وجہ یہ ہے کہ اس بوسیدہ نظام سے ان کے مفاد وابستہ ہیں۔

خیال رہے کہ لاہور ہائی کورٹ نے مسلم لیگ ن کے تاحیات قائد اور قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف  کو مشروط طور پر بیرون ملک جانے کی اجازت دے دی۔

ہم نیوز کے مطابق عدالتی فیصلے میں کہا گیا ہے کہ شہباز شریف 8 ہفتوں کے بعد پاکستان واپس آنے کے پابند ہوں گے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز