حکومت کا شہباز شریف کے حوالے سے ایف آئی اے کو متحرک کرنے کا فیصلہ

قومی اسمبلی میں بجٹ کی منظوری: شہباز شریف کی غیر حاضری

حکومت نے حدیبیہ پیپر ملز کیس سے متعلق سابق وزیراعلی پنجاب شہباز شریف کے حوالے سے ایف آئی اے کو متحرک کرنے کا فیصلہ کر لیا۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت حکومتی رہنماوں کا اجلاس ہوا جس میں وزیراعظم نے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر کو فوری طور پر لاہور ہائی کورٹ میں اپیل دائر کرنے کی ہدایت کی ہے۔

وزیراعظم نے کہا ہے کہ ایف آئی اے ہی حدیبیہ پیپر ملز کیس کے حوالے سے کام کرے۔

وزیراعظم نے شہزاد اکبر کو حدیبیہ پیپر ملز کیس پر ورکنگ کر کے رپورٹ پیش کرنے کی بھی ہدایت کی ہے ۔

حکومت کا نواز، شہباز شریف کیخلاف حدیبیہ پیپر ملز کا مقدمہ دوبارہ کھولنے کا فیصلہ

ذرائع کے مطابق اجلاس میں اٹارنی جنرل ،شہزاد اکبر،اور وزیراطلاعات فواد چودھری اور علی ظفر شریک تھے۔

خیال رہے کہ اس سے پہلے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے کہا ہے کہ حدیبیہ پیپرملز کیس کی تحقیقات وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کرے گا۔

اپنے ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ یہ اہم کیس ہے، حدیبیہ پیپر کیس کچھ ٹیکنکل بنیادوں پر بند کیا گیا تھا، یہ پانامہ کیس سے بڑا کیس ہے۔

انہوں نے کہا کہ شہباز شریف کو روکنے کے اور بھی طریقے ہیں، ہم کورٹ میں اپیل کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ شہباز شریف نے جو لندن میں ٹی ٹیز لگائیں ہیں ان کی شہادتیں آئی ہیں، نواز شریف بھی علاج کے لیے لندن گئے تھے اور واپس نہیں آئیں.

انہوں نے کہا کہ فواجداری مقدمات میں نیا ثبوت آئے گا تو کیس دوبارہ کھولے گا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز