اسرائیلی جارحیت کے خلاف ترکی کا عملی قدم

اسرائیلی جارحیت کے خلاف ترکی کا عملی قدم

فوٹو: فائل

انقرہ: ترکی نے فلسطینیوں کے خلاف کی جانے والی سرائیلی جارحیت پر شدید ردعمل ظاہر کرتے ہوئے اسرائیلی وزیر کے دعوت نامے کو منسوخ کردیا ہے۔

غزہ: اسرائیلی فضائیہ کا تازہ حملہ، 12 منزلہ رہائشی عمارت منہدم

ترک ذرائع ابلاغ کے مطابق اسرائیل کی جانب سے کی جانے والی وحشیانہ بمباری اور جارحیت کے خلاف عملی قدم کے طور پر ترکی نے جون میں منعقد ہونے والی توانائی کانفرنس میں اسرائیلی وزیر برائے توانائی یووال ستینتز کا دعوت نامہ منسوخ کر دیا ہے۔

ذرائع ابلاغ کے مطابق ترکی نے اپنے فیصلے سے اسرائیلی حکام کو آگاہ بھی کردیا ہے۔ ترکی نے اس ضمن میں اسرائیلی حکام سے کہا ہے کہ مسجدِ اقصیٰ اور اسرائیلی فوج کی جانب سے فلسطینی شہری آبادی پرکی جانے والی بمباری کے خلاف احتجاجاً یہ کیا گیا ہے۔

اسرائیل کی فلسطینیوں پر بمباری: شہدا کی تعداد 24 ہو گئی،180 زخمی

مسلمانوں کے قبلۂ اول پر اسرائیلی جارحیت کے خلاف اور فلسطینوں کے حق میں دارالحکومت انقرہ اور استنبول میں ہزاروں افراد نے اسرائیلی سفارت خانے و قونصل خانے کے باہر احتجاج کیا۔

ذرائع ابلاغ کے مطابق ترک مظاہرین ریلی کی شکل میں اسرائیلی سفارتخانے پہنچے اور موبائل کی ٹارچ جلا کر فلسطینیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا۔

اسرائیل: امن کی اپیلیں مسترد، حملوں میں تیزی کیلیے 5 ہزار ریزرو فوجی طلب

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے مسلم ممالک کے سربراہان کے نام جاری کردہ پیغام میں کہا ہے کہ اب مظلوم فلسطینیوں کا عملی طور پر ساتھ دیا جائے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز