انسداد پولیو مہم کے دوران فائرنگ: دو پولیس اہلکار شہید

انسداد پولیو مہم کے دوران فائرنگ: دو پولیس اہلکار شہید

مردان: خیبر پختونخوا کے ضلع مردان کے علاقے دبئی اڈہ میں انسداد پولیو مہم کے دوران نامعلوم مسلح افراد کی فائرنگ سے دو پولیس اہلکار شہید ہو گئے ہیں۔

پاکستان میں پانچ روزہ انسداد پولیو مہم کا آج سے آغاز

خلیجی ویب سائٹ کے مطابق مردان کے ضلعی پولیس افسر ڈاکٹر محمد زاہداللہ نے  بتایا ہے کہ بدھ کو دونوں پولیس اہلکار انسداد پولیو ٹیم کے ساتھ ڈیوٹی پر معمور تھے۔

انہوں نے کہا کہ پولیو ٹیم کی خواتین ورکرز کو گھروں پر چھوڑنے کے بعد پولیس اہلکار واپس جا رہے تھے جب کو ان کو نشانہ بنایا گیا۔

جاپان پولیو ویکسین کی خریداری کیلئے پاکستان کو  4.57 ملین ڈالر دے گا 

شہید پولیس اہلکاروں سید علی رضا اور شاکر پر نامعلوم موٹر سائیکل سواروں کی جانب سے فائرنگ کی گئی۔ دونوں موقع پر ہی شہید ہو گئے ہیں۔

اردو نیوز کے مطابق ڈاکٹر محمد زاہد اللہ کا کہنا ہے کہ پولیو سے بچاؤ کی مہم جاری رکھنے کے بارے میں اہکاروں کی تدفین کے بعد فیصلہ کیا جائے گا۔ دونوں شہید پولیس اہلکاروں کا تعلق ضلع مردان سے تھا۔

پولیو ٹیم پر حملہ، لیڈی ہیلتھ ورکر مار پیٹ سے بے ہوش

پاکستان میں پانچ روزہ پولیو مہم کا آغاز 7 جون سے ہوا تھا۔ اس سے قبل بھی انسداد پولیو ٹیم کے خلاف اسی قسم واقعات ہوئے ہیں جس میں پولیس اہکاروں سمیت انسداد پولیو ٹیم میں کام کرنے والی خواتین بھی نشانہ بنی ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز