فردوس اور مندوخیل کی لڑائی میں جاوید چوہدری کی’بے بسی‘

سوشل میڈیا پر فردوس عاشق اعوان اور قادر مندوخیل پر تو تنقید ہورہی ہے ساتھ ہی سینیر صحافی اور اینکر جاوید چوہدری کی’بے بسی‘کو بھی اچھالا جارہا ہے۔

کچھ سوشل میڈیا صارفین کہہ رہے ہیں کہ جاوید چوہدری جان بوجھ کر لڑائی کروا کر دور رہ کر ویڈیو بنواتے رہے۔

کچھ کا کہنا ہے کہ جاوید چوہدری کو معلوم تھا کہ ویڈیو بن رہی ہے اور وہ بنواتے رہے۔ کچھ کا کہنا ہے کہ جاوید چوہدری ایک فریق کے خاتون ہونے کی وجہ سے دور رہے لیکن ساتھ ہی دوسروں کا کہنا ہے کہ جاوید چوہدری کم سے کم قادر مندوخیل کو تو پیچھے ہٹاسکتے تھے۔

میڈیا پر سیاستدانوں کی لڑائی کے ساتھ ساتھ اینکر پرسن کے کردار پر بھی تنقید ہورہی ہے کہا جارہا ہے یہ صرف ریٹنگ اور سوشل میڈیاپر وائرل ہونے کیلیے ایسے جھگڑوں کی آگ پر اور تیل ڈالا جاتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: مندوخیل نےمیرے خلاف فحش زبان استعمال کی، فردوس عاشق اعوان

خیال رہے کہ گزشتہ اینکرجاوید چوہدری کے شو میں معاون خصوصی اطلاعات پنجاب ڈاکٹر فردوس عاشق اور پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما قادر مندوخیل کے درمیان تلخ جملوں کا تبادلہ ہوا تھا۔

سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ فردوس اعوان نے قادو مندوخیل کو تھپڑ مارا۔ تاہم فردوس اعوان کا کہنا ہے کہ پی پی رہنما نے ان کے خلاف فحش زبان استعمال کی۔

فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ تصویر کا دوسرا رخ نہیں دکھایا جا رہا۔ انہوں نے نجی ٹی وی سے سے درخواست ہے کی کہ معاملے کی مکمل ویڈیو سامنے لائیں۔

 

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز