اقتصادی سروے رپورٹ: گدھوں کی تعداد میں اضافہ

پاکستان: گدھوں کی تعداد میں اضافہ ہو گیا

اسلام آباد: پاکستان کی اقتصادی سروے رپورٹ برائے سال 21-2020 میں انکشاف کیا گیا ہے کہ ملک میں گدھوں کی تعداد بڑھ گئی ہے لیکن گھوڑوں، خچروں اور اونٹوں کی تعداد میں اضافہ نہیں ہوا ہے۔

البانیہ: گدھی کا دودھ کورونا کا علاج قرار، مانگ میں اضافہ

ہم نیوز کے مطابق اقتصادی سروے رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ملک میں گدھوں کی تعداد میں ایک لاکھ کا اضافہ ہوا ہے۔

اقتصادی سروے رپورٹ کے مطابق ملک میں گدھوں کی تعداد 55 لاکھ تھی جو 1 لاکھ کے اضافے کے بعد 56 تک پہنچ گئی ہے جب کہ ایک سال میں بھینسوں کی تعداد میں 12 لاکھ کا اضافہ ہوا ہے جو پہلے 4 کروڑ 12 لاکھ تھیں۔ اس وقت ان کی تعداد 4 کروڑ 24 لاکھ ہوچکی ہیں۔

اقتصادی سروے رپورٹ کے مطابق ملک میں بھیڑوں کی تعداد میں بھی 4 لاکھ کا اضافہ ہوا ہے جو پہلے 3 کروڑ 12 لاکھ تھے مگر اب 3 کروڑ 16 لاکھ ہوچکے ہیں۔

ن لیگیوں کو گدھا کہنے پر عمران خان کی طلبی

ہم نیوز کے مطابق سروے رپورٹ میں بتایا گیا کہ بکروں کی تعداد میں 21 لاکھ کا اضافہ ہوا ہے جس کے بعد  بکروں کی تعداد 7 کروڑ 82 لاکھ سے تعداد 8 کروڑ 3 لاکھ ہوگئی ہے۔

اقتصادی سروے رپورٹ کے مطابق گھوڑوں کی تعداد 4 لاکھ، خچر 2 لاکھ اور ملک میں اونٹوں کی تعداد 11 لاکھ برقرار رہی ہے۔

نازیبا زبان استعمال نہیں ہوئی، گدھا معمولی لفظ ہے، بابر اعوان

اقتصادی سروے رپورٹ کے مطابق ملک میں ایک سال کے دوران 19 لاکھ مویشیوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے جس کے نتیجے میں مویشیوں کی تعداد 4 کروڑ 96 لاکھ سے بڑھ کر 5 کروڑ 15 لاکھ ہوگئی ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز