انسٹاگرام پر نئے فیچر کی آزمائش

انسٹا گرام سے فائدہ کیسے اٹھائیں؟

سماجی رابطے کی ویب سائٹ انسٹاگرام نے اسٹوریز کے ساتھ دیے جانے والے لنک سے ایک نئے طریقہ کار کی آزمائش شروع کر دی۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق انسٹاگرام میں اب سوائپ اپ کے بجائے ایک اسٹیکر کے ساتھ لنکس منسلک کیے جاسکیں گے۔ کمپنی نے نئے طریقہ کار کی آزمائش شروع کی ہے تاکہ لنکس کو بہتر طریقے سے صارفین استعمال کرسکیں۔

یہ اسٹیکرز اسی طرح کام کریں گے جیسے سوائپ اپ لنکس کام کرتے ہیں تاہم اس میں بس سوائپ اپ کے بجائے کلک کرنا ہو گا۔ اسی طرح صارفین اب اسٹوریز پر اپنا ردعمل ایک اسٹیکر سے بھی ظاہر کرسکیں گے جو اس وقت سوائپ اپ والی اسٹوریز میں ممکن نہیں تھا۔

انسٹاگرام کے پراڈکٹ ہیڈ وشال شاہ کے مطابق اس ٹیسٹ کا مقصد یہ جاننا ہے کہ لوگ لنکس سے کیا فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔ اس ٹیسٹ میں یہ بھی دیکھا جائے گا کہ لوگ کس طرح کے لنکس پوسٹ کرتے ہیں جبکہ گمراہ کن مواد والے لنکس پر بھی نظر رکھی جائے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ اسٹیکرز اس پلیٹ فارم میں لوگوں کا پسندیدہ طریقہ کار ہے اور اس لیے لنکس کو مجموعی نظام کا حصہ بنایا جارہا ہے جو اسے سادہ بنائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: ٹوئٹر انڈیا کے سربراہ کے خلاف مقدمہ درج

انہوں نے مزید کہا کہ لنک اسٹیکرز انسٹاگرام کا ایسا مقصد ہے جسے بتدریج حاصل کیا جائے گا اور یہ مستقبل کا لائحہ عمل ہے جس سے ہم ایپ کو مزید بہتر کرنا چاہتے ہیں۔ فی الحال یہ نیا فیچر ویریفائیڈ صارفین یا کم از کم 10 ہزار فالوورز والے صارفین تک محدود ہوگا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز