پیٹرول ملکی تاریخ کی مہنگی ترین سطح پر پہنچ گیا

عید الاضحیٰ کا موقع: پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ

وفاقی حکومت نے آئندہ 15 روز کے لیے پیٹرول کی قیمت میں 5 روپے 40 پیسے کا اضافہ کر دیا۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی شہباز گل نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر سے جاری پیغام میں بتایا ہے کہ وزیرِ اعظم نے اوگرا سفارشات کے برعکس عوامی مفاد میں پٹرول کی قیمت میں محض 5.40 روپے فی لیٹر اضافے کی منظوری دی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ ڈیزل کی قیمت میں 2.54 روپے فی لیٹر، کیروسین کی قیمت میں 1.39 روپے فی لیٹر اور لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 1.27 روپے فی لیٹر کی اجازت دی گئی ہے۔

ملک بھر میں پیٹرولیم مصنوعات کی ترسیل معطل، بحران پیدا

شہباز گل نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کا پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کے حوالے سے اوگرا کی سفارشات کے برعکس عوام کوحد درجہ ریلیف فراہم کرنے کا فیصلہ عالمی منڈی میں گذشتہ کئی ماہ سے پٹرولیم مصنوعات کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کے پیش نظر ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اوگرا نے پٹرول کی قیمت میں 11.40 روپے فی لیٹر اضافے کی تجویز دی گئی تھی۔

انہوں نے مزید کہا کہ اوگرا تجویز کے مطابق پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ نہ کرنے اور عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف فراہم کرنے کی غرض سے کیے جانے والے اس فیصلے کے نتیجے میں پڑنے والا بوجھ حکومت خود برادشت کرے گی

خیال رہے کہ 5 روپے 40 پیسے اضافے کے بعد پیٹرول کی نئی قیمت 118 روپے 9 پیسے فی لیٹر ہو گئی ہے۔ نئی قیمتوں کا اطلاق آج رات بارہ بجے ہو گا۔

 

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز