پاک افغان بارڈر: سرحد پار سے فائرنگ، حوالدار شہید

شمالی وزیرستان: میران شاہ، سیکیورٹی فورسز کا آپریشن، 2 جوان شہید

راولپنڈی: پاک افغان بارڈر پر ایک بار پھر سرحد پار سے دہشت گردانہ کارروائی کی گئی ہے. پاک فوج نے بھی بھرپور جواب دیا ہے۔

پاک افغان سرحد پر فائرنگ، باڑ لگانے میں مصروف جوان شہید

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق پاک افغان بارڈر پرلوئر دیر میں سرحد پارسے دہشت گردوں نے فائرنگ کی ہے۔ فائرنگ افغان علاقے سے فوجی چوکی پر کی گئی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق دہشت گردی کے واقعے پر پاک فوج کی جانب سے فوری طور پر جوابی کارروائی کی گئی۔ پاک فوج کی جوابی فائرنگ سے ایک دہشت گرد ہلاک جب کہ تین زخمی ہوگئے ہیں۔

کابل ایئر پورٹ: یکے بعد دیگرے 3 دھماکے، 10 امریکی فوجیوں سمیت60ہلاک

دہشت گردوں کی جانب سے کی جانے والی فائرنگ کے نتیجے میں پاک فوج کے ایک جوان نے جام شہادت نوش کرلیا ہے۔ جام شہادت نوش کرنے والے 36 سالہ حوالدار گل امیر کا تعلق لکی مروت سے تھا۔

اس سے قبل بھی متعدد ایسے واقعات رونما ہوچکے ہیں جس میں پاکستانی شہریوں اور پاک فوج کے جوانوں کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

امریکہ اور نیٹو نے افغانستان سے انخلا میں پاکستان کی مدد مانگ لی

مئی میں بھی پاک افغان بارڈر پر باڑلگانے کے دوران سرحد پار سے فائرنگ کے نتیجے میں چار ایف سی اہلکارشہید اور 6 زخمی ہوئے تھے۔

متعلقہ خبریں