رمیز راجہ، اسد علی پی سی بی بورڈ آف گورنرز میں شامل

لاہور: سابق ٹیسٹ کرکٹر رمیض راجہ اور اسد علی خان کا نام بطور بورڈ آف گورنرز میں شامل ہونے کا نوٹیفیکشن جاری کر دیا گیا ہے۔

 پی سی بی چیئرمین کا انتخاب بورڈ آف گورنرز (بی او جی) کے اجلاس میں کیا جاتا ہے اور اُمیدوار ہونے کیلئے بنیادی شرط بی او جی کا ممبر ہونا لازمی ہے۔

دونوں ناموں کی منظوری وزیر اعظم عمران نے دی ہے،  بی او جی دونوں ناموں میں سے ایک کا چئیرمین پی سی بی کا چناو کرے گا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی کے عہدے کی مدت پوری ہونے کے بعد اب پی سی بی نئے چیئرمین کے انتخاب کی طرف بڑھ رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: احسان مانی کی معذرت، کیا ریمبو آرہا ہے؟

پی سی بی آئین کے آرٹیکل 6کے مطابق چیئرمین کا انتخاب بورڈ آف گورنرز کے ممبران اپنے درمیان میں سے ہی کرتے ہیں، چیئرمین کے عہدے کی مدت 3 سال ہوتی ہے۔

ذرائع کے مطابق سابق کرکٹررمیز راجہ کو چیئرمین پی سی بی بنائے جانے کا امکان ہے۔

کچھ روز قبل عمران خان نے سابق کپتان رمیز راجہ سے وزیراعظم ہاؤس میں ملاقات کی تھی، ملاقات کے بعد عمران خان کی طرف سے رمیزراجہ کا نام بطور چئیرمین پی سی بی بورڈ آف گورنرز کو بھجوانے کی خبروں نے زور پکڑ لیا تھا۔

یاد رہے کہ 59 سالہ رمیز راجہ پاکستان کی جانب سے 57 ٹیسٹ اور 198 ایک روزہ میچز کھیل چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: رمیز راجہ نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کا احوال بتا دیا

سابق کپتان انٹرنیشنل و ڈومسٹک کرکٹ میں کمنٹری کا بھی وسیع تجربہ رکھتے ہیں اور انہیں کرکٹ کا راجہ بھی کہا جاتا ہے۔ رمیز راجہ 1992 ورلڈ کپ جیتنے والی ٹیم بھی حصہ تھے، اور انہوں نے ہی ورلڈ کپ فائنل میں تاریخی کیچ پکڑا تھا۔

اس کے علاوہ سابق کپتان کو فلم سازی کا بھی شوق ہے، انہوں نے بھارتی فلم تور باز میں بطور کریٹیو ڈائریکٹر خدمات سرانجام دی تھیں۔

متعلقہ خبریں