واشنگٹن کیلیے مزید شرمندگی: طالبان نے امریکی فوجی گاڑیاں ایران کے حوالے کردیں

واشنگٹن کیلیے مزید شرمندگی:طالبان نے امریکی فوجی گاڑیاں ایران کے حوالے کردیں

کابل: افغانستان میں موجود امریکہ کی فوجی گاڑیاں طالبان نے ایران کے حوالے کردی ہیں۔

پنج شیر پر طالبان کا قبضہ: احمد مسعود اور امراللہ صالح فرار

مؤقر انگریزی اخبار عرب نیوز کے مطابق طالبان کی جانب سے ایرانی حکام کو امریکی فوجی گاڑیوں کی حوالگی کے بعد تہران کی جانب سے جانے والے قافلے کی ویڈیو بھی بنائی گئی ہے۔

اس ضمن میں اخبار سے بات چیت کرتے ہوئے دفاعی و سیکیورٹی امور کے ماہر جوناتھن کٹسن نے کہا کہ گاڑیوں کا نقصان امریکہ کے لیے مزید شرمندگی کا سبب ہے۔

جوناتھن کٹسن کا کہنا ہے کہ اگر یہ فوجی گاڑیاں آئندہ مستقبل میں عراق میں امریکی فورسز کی شکل میں استعمال ہوئیں اور یا ان سے تیکنیکی معلومات لے لی گئیں تو بیحد خطرناک صورتحال پیدا ہو گی۔ ان کا کہنا ہے کہ اس طرح مزید نقصان کا احتمال ہے۔

طالبان کی درخواست ایران نے مان لی: ایندھن کی برآمدات شروع

دفاعی و سیکیورٹی امور کے ماہر جوناتھن کٹسن نے اس سلسلے میں واضح اور دو ٹوک انداز میں کہا کہ اس ضمن میں امریکی انٹیلی جنس ایجنسیوں سے سنجیدہ سوالات پوچھے جانے چاہئیں کیونکہ ان کے اندازے پھر غلط ثابت ہوئے ہیں۔

اخبار کے مطابق تہران جانے والے امریکی فوجی گاڑیوں کے قافلے میں ہمویز اور بارودی سرنگوں سے بچنے کے لیے بھاری بکتر بند گاڑیاں شامل تھیں۔

اس سلسلے میں کہا گیا ہے کہ سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو کلپ بھی شیئر کیا گیا ہے جس میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ ایران نے کچھ امریکی ٹینکس بھی حاصل کیے ہیں۔

فرار ہونے کی اطلاع غلط ہے، پنجشیر میں ہوں، لڑائی جاری ہے: امراللہ صالح

افغان سکیورٹی فورسز کو امریکہ کی جانب سے 70 ہزار سے زیادہ فوجی گاڑیاں مہیا کی گئی تھیں۔ اس حوالے سے کہا گیا ہے کہ واشنگٹن نے الزام عائد کیا ہے کہ ایران نے عسکری اور فوجی آلات کی تربیت کے ذریعے طالبان کے اچانک اقتدار میں آنے کی راہ ہموار کی ہے۔

متعلقہ خبریں