کورونا وائرس کا ڈیلٹا ویریئنٹ سب سے خطرناک ہے، عالمی ادارہ صحت

عالمی ادارہ صحت نے کورونا کی نئی قسم کو تشویشناک قرار دے دیا

فائل فوٹو

نیویارک: عالمی ادارہ صحت نے کہا ہے کہ کورونا وائرس میں ڈیلٹا ویریئنٹ سب سے خطرناک ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق عالمی ادارہ صحت کی کووڈ 19 کے لیے ٹیکنیکل لیڈ جینیوا میں مقیم ڈاکٹر ماریہ وان کیر خوو نے آن لائن سیشن سے خطاب میں کہا کہ کورونا وائرس کا نیا ویریئنٹ ’’میو‘‘ سامنے آنے کے باوجود ڈیلٹا ویریئنٹ بہت تیزی سے پھیل رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ڈیلٹا ویریئنٹ تمام ویریئنٹس سے زیادہ خطرناک ہے۔ ڈیلٹا ویریئنٹ اپنے سے پہلے کے ویریئنٹ کے مقابلہ میں دو گنا تیزی سے پھیلتا ہے جس کا مطلب ہے کہ یہ زیادہ لوگوں کو متاثر کر سکتا ہے۔

ڈاکٹر ماریہ کے مطابق سائنس دان کورونا وائرس کے نئے ویریئنٹس کا مطالعہ کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: آٹزم کے مرض میں مبتلا بچے کی خوبصورت اذان

عالمی ادارہ صحت نے گزشتہ ہفتے کورونا وائرس کی نئی قسم ’’میو‘‘ دریافت کی تھی جس کی شناخت پہلی بار جنوری میں کولمبیا میں ہوئی تھی۔ جو کولمبیا میں موجودگی کے بعد یورپ اور دیگر جنوبی امریکی ممالک میں رپورٹ ہوا ہے۔

عالمی ادارہ صحت نے کہا کہ عالمی سطح پر اس وائرس کا پھیلاؤ0.1 فیصد سے کم ہے جبکہ کولمبیا میں 39 فیصد ہے۔

متعلقہ خبریں