گیس کی قیمت 35 فیصد تک بڑھانے کی تجویز

گیس کی قیمت 35 فیصد تک بڑھانے کی تجویز

فائل فوٹو

اسلام آباد: گھریلو صارفین کے لیے گیس کی قیمت میں 35 فیصد اضافے کی تجویز آ گئی۔

ذرائع کے مطابق گیس مہنگی کرنے کی تجویز نومبر سے فروری 4 ماہ کے لیے ہے اور گیس استعمال کے آخری 4 سلیب پر 35 فیصد تک اضافہ کی ورکنگ کی گئی ہے۔ آخری چار سلیب کی کی قیمت ماہانہ 553 روپے سے 1460 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو تک ہے۔

ذرائع پیٹرولیم کے مطابق پہلے 2 سلیب کے لیے گیس کی قیمتوں میں اضافہ تجویز نہیں کیا گیا۔ اضافے کی ورکنگ میں صرف گھریلو صارفین کو شامل کیا گیا ہے اور یہ تجاویز کابینہ کی توانائی کمیٹی میں پیش کی گئی تھیں۔

یہ بھی پڑھیں: بینکوں سے قرضہ لینے والوں کیلئے اسٹیٹ بینک کے اہم فیصلے

ذرائع کے مطابق گیس کی قیمت میں اضافے پر ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں ہوا ہے تاہم گیس کی قیمتوں میں اضافے کے ورکنگ پر فیصلہ کابینہ کی منظوری سے ہو گا۔ پہلے گھریلو سلیب کی قیمت 121 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو برقرار رکھنے کی تجویز دی گئی ہے۔

گھریلو صارفین کے دوسرے سلیب کی قیمت 300 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو برقرار رکھنے کی تجویز ہے جبکہ گھریلو صارفین کے لیے دوسرا سلیب ماہانہ 100 مکعب میٹر تک استعمال کا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز