صدارتی محل پر خودکش دھماکہ، 8 افراد ہلاک

موغا ديشو: صومالیہ کے دارالحکومت میں خودکش بمبار نے بارود سے بھری کار صدارتی محل کی چیک پوسٹ سے ٹکرا دی جس کے نتیجے میں 8 افراد ہلاک اور 9 زخمی ہو گئے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق صومالیہ کے دارالحکومت موغادیشو میں صدارتی محل کے قریب چیک پوسٹ پر زور دار دھماکہ ہوا، دھماکا اتنا شدید تھا کہ آس پاس موجود گاڑیاں مکمل طور پر تباہ ہو گئیں۔

چیک پوسٹ پر ہونے والے دھماکے میں 8 افراد ہلاک اور 9 زخمی ہو گئے۔ ہلاک اور زخمی ہونے والوں کو قریبی اسپتال منتقل کیا گیا جہاں 3 زخمیوں کی حالت نازک ہونے کے سبب ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ایسا ملک جہاں کورونا کا کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا

پولیس کا کہنا ہے کہ دھماکہ ایک خود کش کار بمبار نے کیا جس نے صدارتی محل میں داخل ہونے میں ناکامی پر کار چیک پوسٹ سے ٹکرادی۔ الشباب نامی شدت پسند جماعت نے خود کش دھماکے کی ذمہ داری قبول کر لی۔

حکام کا کہنا ہے کہ دھماکے کے وقت صدارتی محل میں صدر اور وزیر اعظم موجود تھے جو خیریت سے ہیں۔

واضح رہے کہ صومالیہ کے اکثر علاقوں میں الشباب کی عمل داری ہے تاہم دارالحکومت اب تک حکومت فورسز کے کنٹرول میں ہے جہاں الشباب کے جنگجو کارروائیاں کرتے رہتے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز