سعودی امداد: پاکستانی روپیہ تگڑا، ڈالر 2 روپے57پیسے گر گیا

سعودی عرب  کے امدادی پیکج  کے مثبت اثرات مرتب ہونا شروع ہوگئے ہیں۔

پاکستان کی روپے کی قدر میں اضافہ ہوا اور انٹر بینک میں ڈالر2روپے57 پیسے سستا ہو گیا ہے۔  ڈالر کی قیمت 172 روپے70 پیسے پر آگئی ہے۔

خیال رہے کہ سعودی حکومت نے آج نیشنل بینک آف پاکستان میں3 ارب ڈالر منتقل کیے ہیں۔ سعودی عرب کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ سعودی عرب، پاکستان کی معیشت کو ہمیشہ سہارا دیتا رہے گا۔

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ پاکستان میں ڈالر اوپر جانے کی وجہ افغانستان میں اس کا اسمگل کیا جانا ہے۔

مشیرخزانہ شوکت ترین نے کہا ہے کہ پاکستانی روپے پر اس وقت دباؤ ہے اور سعودی امداد سے اس کو بہتر کرنے میں مدد ملے گی۔

وفاقی وزیر حماد اظہر کا کہنا ہے کہ سعودی امداد سے تجارت اور فاریکس اکاونٹس پر دباؤ کم کرنے میں مدد ملے گی۔

آج سے تین سال قبل جب عمران خان نے وزارت عظمی کا حلف اٹھایا تو اس وقت ڈالر کی قیمت 123 روپے تھی اور گزشتہ روز ڈالر تاریخ کی بلند ترین سطح یعنی 175 روپے تک پہنچ گیا تھا۔

تین سال قبل ملک میں پیٹرول 95 روپے فی لیٹر میں فروخت کیا جا رہا تھا جب کہ آج پیٹرول کی قیمت تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکی ہے۔ پیٹرول 137.79 روپے فی لیٹر فروخت کیا جا رہا ہے۔

اسی طرح 2018 میں سونے کی فی تولہ قیمت 60 ہزار روپے تھی جو تین سال میں بڑھتے بڑھتے تاریخ کی بلند ترین سطح یعنی 1 لاکھ20 ہزار سے بھی اوپر پہنچ چکی ہے۔

 

 

متعلقہ خبریں