جاسوسی کے الزام میں ایپل نے اسرائیلی کمپنی پر مقدمہ کر دیا

جاسوسی کے الزام میں ایپل نے اسرائیلی کمپنی پر مقدمہ کر دیا

فائل فوٹو

معروف ٹیکنالوجی کمپنی ایپل نے جاسوسی سافٹ ویئر بنانے والی اسرائیلی کمپنی کے خلاف مقدمہ دائر کر دیا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق ایپل نے ساسوسی سافٹ ویئر “پیگاسس” بنانے والی اسرائیلی کمپنی “این ایس او ” کے خلاف امریکہ میں مقدمہ دائر کیا ہے جس میں مؤقف اپنایا گیا ہے کہ این ایس او کمپنی کی جانب سے بنایا گیا سافٹ ویئر “پیگاسس” صارفین کی ڈیوائسز کو ہیک کر رہا ہے۔

امریکی وفاقی عدالت میں دائر کی گئی درخواست میں ایپل نے “این ایس او” کو 21ویں صدی کا غیر اخلاقی کرائے کا فوجی قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ اسرائیلی کمپنی نے انسانی حقوق کی خلاف ورزی کرتے ہوئے سائبر سرویلنس ٹیکنالوجی کا استعمال کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: بھارت کا کرپٹو کرنسی پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ

واضح رہے کہ ایمنسٹی انٹرنیشنل نے اپنی ایک رپورٹ میں انکشاف کیا تھا کہ اسرائیلی کمپنی نے جاسوسی کے سافٹ ویئر کے ذریعے دنیا بھر میں کم از کم 50 ہزار افراد کی مبینہ جاسوسی کی گئی جس کا دائرہ تقریباً 50 ممالک تک پھیلا ہوا تھا۔

رپورٹ کے مطابق بیگاسس کو مبینہ طور پر سیاسی رہنماؤں اور صحافیوں کے فون ہیک کرنے کے لیے استعمال کیا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز