آغا سراج درانی کا 2 روزہ راہداری ریمانڈ منظور

احتساب عدالت اسلا م آباد نے آغا سراج درانی کا 2 روزہ راہداری ریمانڈ منظور کر لیا۔

نیب نے گرفتار  اسپیکر سندھ  اسمبلی آغا سراج درانی کو احتساب عدالت اسلام آباد میں پیش کیا اور دو روزہ راہداری ریمانڈ کی استدعا کی ۔

جج احتساب عدالت نے استفسار کیا  کہ میرا خیال ہے آغا سراج درانی پہلے بھی پیش ہوئے تھے؟تفتیشی افسر نے عدالت میں جواب دیا کہ  سراج درانی دو سال پہلے گرفتار ہوئے تھے۔

جج نے تفتیشی افسر سے سوال کیا کہ آغا سراج درانی کوکراچی کب لے کے جانا ہے؟  نیب پراسیکیوٹر نے بتایا کہ فلائٹ کا شیڈول دیکھ رہے ہیں،پہلی ممکنہ فلائٹ پر لے جایا جائے گا۔

عدالت  نے  آغا سراج درانی سے  پوچھا کہ آپ کچھ کہنا چاہتے ہیں؟ اسپیکر سندھ اسمبلی نے جواب دیا کہ بس جلدی بھجوادیں۔

عدالت نے نیب کی استدعا منظور کرتے ہوئے آغا سراج درانی کو دو روزہ راہداری ریمانڈ پر دےد یا۔  عدالت نے نیب کو پیر کے روز تک آغا سراج درانی کو احتساب عدالت کراچی میں پیش کرنےکا حکم دیا ہے۔

نیب پراسیکیوٹر کی جانب سے میڈیکل رپورٹ بھی عدالت میں پیش کی گئی۔

یہ بھی پڑھیں : اسپیکرسندھ اسمبلی آغا سراج درانی سپریم کورٹ کے باہر سےگرفتار

آغا سراج درانی نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ سپریم کورٹ کے حکم پر گرفتاری دی ہے۔ صحافی نے سوال کیا کہ آغا صاحب آپ کراچی میں کیوں نہیں گرفتار ہوتے ، ہمیشہ اسلام آباد سے ہوتے ہیں،  آغا سراج درانی نے جواب دیا کہ بس جہاز میں آنے جانے کا شوق ہے۔ تیس سال سے ہمارے ساتھ یہی سلوک ہو رہا ہے۔

یاد رہے  کہ گزشتہ روزنیب نے  اسپیکرسندھ اسمبلی آغا سراج درانی کو آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں  سپریم کورٹ کے باہر سے گرفتار کر لیا تھا۔

آغا سراج درانی نے سندھ ہائیکورٹ سے درخواست ضمانت منسوخ  ہونے کے بعد سپریم کورٹ سے رجوع کیا تھا۔

متعلقہ خبریں