سانحہ مری: برف ہٹانے والی 20 گاڑیاں ایک ہی جگہ کھڑی رہنے کا انکشاف

مری میں برف ہٹانے والی 29 گاڑیوں میں سے 20 ایک ہی مقام سنی بینک میں کھڑی تھیں، سانحے کی تحقیقات کے دوران اہم انکشاف سامنے آیا ہے، تفتیش حتمی مرحلے میں داخل ہوگئی۔

کمیٹی نے آپریشنل عملے اور ریسکیو 1122 کے اہلکاروں کے بیانات بھی قلمبند کرلیے ہیں۔ سانحہ مری کی تحقیقات کرنے والی حکومتی کمیٹی 5 روز سے پنجاب ہائوس مری میں موجود ہے۔

کمیٹی نے آپریشنل عملے اور برفانی طوفان کے دوران مدد کیلئے موصول ہونے والی کالز کے بارے میں ریسکیو 1122 کے اہلکاروں کے بیانات بھی قلمبند کیے۔ ذرائع کے مطابق جب کمیٹی نے برف ہٹانے والی گاڑیوں کے بارے میں پوچھا تو ہائی وے مکینیکل ڈیپارٹمنٹ کے حکام نے بتایا کہ 29 گاڑیوں میں 20 گاڑیاں سنی بینک میں کھڑی تھیں جن کے ڈرائیورزتھے نہ عملہ۔

یہ بھی پڑھیں: سانحہ مری، ہائی کورٹ نے این ڈی ایم اے حکام کو آج ہی طلب کرلیا

شدید برف باری کی وارننگ پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے ذریعے جاری کی گئی، دوران تحقیقات پاکستان میٹرولوجیکل ڈیپارٹمنٹ کا راولپنڈی ڈسٹرکٹ میں دفتر نہ موجود ہونے کا بھی انکشاف ہوا ہے۔

محکمہ جنگلات کے اہلکار تسلی بخش جواب دینے میں ناکام رہے جس پر کمیٹی نے عملے کی تفصیلات اور ان کی ذنمہ داریوں کی فہرست طلب کرلی ہے، معلوم ہوا ہے کہ ضلعی انتظامیہ نے مری کے داخلی راستوں اور سڑکوں سے تقریباً 50 ہزار گاڑیاں واپس بھیجیں۔

متعلقہ خبریں