سانحہ مری:کمشنر، ڈپٹی کمشنر، سی پی او سمیت 15 اعلیٰ افسران فارغ

سانحہ مری کے ذمہ داروں کیخلاف کارروائی کا وعدہ کیا تھا، پورا کردیا: وزیراعلیٰ

 وزیراعلیٰ پنجاب  نے سانحہ مری  کی رپورٹ  آنے پر کمشنر، ڈپٹی کمشنر، سی پی او سمیت  15 اعلیٰ افسران کو فارغ کر دیا۔

لاہور میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے  وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کہا ہے کہ سانحہ مری کی تحقیقات کرنے والی کمیٹی نے اپنی رپورٹ میں غفلت و کوتاہی کی نشاندہی کی ہے،کمیٹی کی سفارشات پر 15 افسران کو عہدوں سے ہٹا دیا گیا ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب نےکہا کہ متعلقہ حکام اپنے فرائض کا ادراک کرنے سے قاصر رہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈپٹی کمشنر کو عہدے سے ہٹا کر انضباطی کارروائی کی سفارش کی گئی ہے۔

پاکستان تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا کہ سی پی او راولپنڈی، سی ٹی او راولپنڈی، ڈی ایس پی ٹریفک اور اے ایس پی مری کو ان کے عہدوں سے ہٹا کرانضباطی کارروائی کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

سانحہ مری: برف ہٹانے والی 20 گاڑیاں ایک ہی جگہ کھڑی رہنے کا انکشاف

وزیراعلیٰ نے کہا کہ کمشنر راولپنڈی کو عہدے سے ہٹا کر معطل کرنے کی سفارش کی گئی ہے جب کہ تمام افسران کو معطل کرکے ان کے خلاف انضباطی کارروائی کا حکم بھی دیا ہے۔

ہم نیوز کے مطابق پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عثمان بزدار نے کہا کہ اسسٹنٹ کمشنر مری کو بھی عہدے سے ہٹا دیا گیا ہے جب کہ ڈویژنل فاریسٹ آفیسر مری ، ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر مری، انچارج مری ریسکیو 1122 اور ڈائریکٹر پی ڈی ایم اے پنجاب کو بھی معطل کردیا گیا ہے۔

سانحہ مری: پوری ریاست ذمہ دار، ہائی کورٹ کی وزیراعظم کو ایک ہفتے میں کارروائی کی ہدایت

وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ سانحہ مری بہت بڑا واقعہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ قوم سے سانحہ مری کے ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کا وعدہ کیا تھا، اپنا وعدہ پورا کردیا ہے۔

متعلقہ خبریں