پائلٹ کو 85 کروڑ روپے کا بل بھیج دیا گیا

نئی دہلی: بھارت میں کریش لینڈنگ کے دوران طیارے کو نقصان پہنچنے پر پائلٹ کو 85 کروڑ روپے کا بل بھیج دیا گیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق مدھیہ پردیش حکومت نے گوالیار ائیرپورٹ پر کریش لینڈنگ کے دوران طیارے کو نقصان پہنچنے پر پائلٹ ماجد اختر کو 85 کروڑ روپے کا بل بھیجا۔

بل وصول ہونے پر پائلٹ ماجد اختر نے کہا کہ انہیں رن وے پر موجود رکاوٹ کے بارے میں نہیں بتایا گیا تھا جس کی وجہ سے لینڈنگ کے دوران طیارہ حفاظتی باڑ سے ٹکرا گیا۔

پائلٹ ماجد اختر نے طیارے کی انشورنس نہ ہونے پر تحقیقات کرنے کا مطالبہ کر دیا۔

ماجد اختر نے اپنے شریک پائلٹ کے ساتھ کورونا کی وبا میں کورونا مریضوں کے ٹیسٹوں کے نمونے اور کورونا سے متعلق دوائیں مختلف شہروں میں پہنچانے کے آپریشن میں حصہ لیا تھا اور وہ گوالیار بھی کورونا سے متعلق دوائیں اور مریضوں کے ٹیسٹوں کے نمونے لے کر پہنچے تھے۔

حکومت کی جانب سے ماجد اختر کو جاری کردہ چارج شیٹ میں کہا گیا تھا کہ کریش لینڈنگ کی وجہ سے 60 کروڑ کا طیارہ اسکریپ میں تبدیل ہو گیا ہے جبکہ رن وے کی مرمت اور دیگر اخراجات بھی برداشت کرنے پڑے ہیں، اس لیے پائلٹ 85 کروڑ روپے ادا کرے۔

متعلقہ خبریں