بھارت: مدھیہ پردیش میں بھی طالبات کے حجاب پر پابندی عائد کرنے کا عندیہ

بھارت: مدھیہ پردیش میں بھی طالبات کے حجاب پر پابندی عائد کرنے کا عندیہ

نئی دہلی: بھارتی ریاست مدھیہ پردیش کے اسکولوں میں بھی طالبات کے حجاب پہننے پر پابندی عائد کرنے پہ غور شروع کردیا گیا ہے۔

بھارت: حجاب والی طالبات کو اسکول میں داخلے سے روکنا خوفناک ہے، ملالہ

ہم نیوز نے بھارت کے مؤقر انگریزی اخبار انڈین ایکسپریس کے حوالے سے بتایا ہے کہ بھارتی ریاست مدھیہ پردیش کے وزیر تعلیم اندر سنگھ پرمار نے واضح طور پر اسکولوں میں حجاب پر پابندی عائد کرنے کا عندیہ دے دیا ہے۔

واضح رہے کہ بھارتی ریاست مدھیہ پردیش کے وزیر تعلیم کی جانب سے طالبات کے حجاب پہننے پر پابندی کا عندیہ ایک ایسے وقت میں دیا گیا ہے کہ جب ریاست کرناٹک میں پہلے بھی اس حوالے سے پایا جانے والا تنازع شدت اختیار کر چکا ہے۔

بھارتی انتہا پسندی، ملالہ سمیت 100 مسلمان خواتین نیلامی کے لیے پیش

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق وزیر تعلیم اندر سنگھ پرمار نے ذرائع ابلاغ سے بات چیت میں کہا ہے کہ ریاستی طور پرجلد حجاب پہننے پر پابندی عائد کردی جائے گی کیونکہ یہ یونیفارم کا حصہ نہیں ہے۔

بھارت: مدھیہ پردیش میں بھی طالبات کے حجاب پر پابندی عائد کرنے کا عندیہ

ریاست مدھیہ پردیشن کے  وزیر تعلیم کی جانب سے جاری کردہ بیان کو اپوزیشن جماعت کانگریس کی جانب سے افسوسناک قرار دیا گیا ہے جب کہ مسلمان تنظیموں کی جانب سے بھی واضح طور پر سخت برہمی ظاہر کی جا رہی ہے۔

انتہا پسند ہندو بےقابو، حجاب پہنی طالبہ پر نعرے بازی،ہراساں کرنے کی کوشش، لڑکی کے اللہ اکبر کے نعرے

وزیر تعلیم اندر سنگھ پرمار کے مطابق ریاست مدھیہ پردیش میں یونیفارم کی بات کر رہے ہیں تو ہر اسکول کا اپنا ڈریس ہے، اسکول کا ڈریس پہن کر بچے اسکول آئیں تو ہی ان کی پہچان ہوتا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں وزیر تعلیم نے کہا کہ حجاب پہننے پر ملک میں کوئی پابندی نہیں ہے لیکن جنہوں نے حجاب پہننا ہے وہ اپنے گھروں میں پہنیں، بازار میں پہنیں اور یا پھر دیگر مقامات پہ پہنیں کوئی پابندی نہیں ہے مگر اسکول میں آنے کے لیے یونیفارم ہی پہننا پڑے گا۔

حجاب پر پابندی کا تنازع، انتہاپسند ہندو اور باحجاب طلبا آمنے سامنے

بھارتی میڈیا کے مطابق مدھیہ پردیش میں کانگریس کے ایم ایل اے عارف مسعود نے اس حوالے سے وزیر تعلیم کے بیان کو افسوسناک قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ 70 سالوں کے دوران کسی بھی تعلیمی ادارے میں حجاب پہننے پر تعلیمی ماحول و نظام خراب نہیں ہوا ہے بلکہ بہتری آئی ہے۔

بھارت میں خاتون پولیس کیڈٹ کے حجاب پر پابندی

انہوں نے واضح طور پر کہا کہ ایسے فرمان پر عمل درآمد نہیں ہونے دیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ حجاب کے ساتھ چھیڑ چھاڑ نہ کریں، بچیوں کو باوقار طریقے سے رہنے دیں اور تعلیم کے معیار پر فوکس کریں۔

متعلقہ خبریں