کورونا وائرس کی ایک اور نئی قسم سامنے آ گئی

کورونا وائرس کی ایک اور نئی قسم سامنے آ گئی

نئی دہلی: اومیکرون کے بعد کورونا وائرس کی ایک اور نئی قسم سامنے آ گئی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق اومیکرون کے بعد کورونا وائرس کی نئی قسم بھارتی ریاست مہاراشٹر میں سامنے آئی ہے۔ جس کے بعد بھارتی انتظامیہ الرٹ ہو گئی۔

کورونا وائرس کی نئی قسم ”ایکس ای“ کا کیس سامنے آیا ہے۔ کُل 376 نمونے لیے گئے تھے جن میں سے 230 ممبئی کے تھے اور 230 میں سے 228 نمونے اومیکرون جب کہ باقی 2 ایکس ای ویرینٹ کے ہیں۔ عالمی ادارہ صحت پہلے ہی ایکس ای کی مختلف قسم کے بارے میں الرٹ کر چکی ہے۔

کورونا وائرس کی یہ مختلف قسم اومیکرون کے ذیلی تغیرات یعنی بی اے ون اور بی اے ٹو کا مجموعہ اسٹرین ہے۔ یہ بی اے ٹو سے 10 فیصد زیادہ مہلک ہے تاہم ایکس ای کتنا خطرناک ہے اس بارے میں ابھی کچھ نہیں کہا گیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز برطانیہ میں ایکس ای ویریئنٹ دریافت ہوا تھا اور یہ اومیکرون کی دیگر اقسام کی نسبت 9.8 فیصد زیادہ تیزی سے منتقل ہوتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: زندہ افراد کے پھیپھڑوں میں پلاسٹک کے باریک ذرات موجود ہونے کا انکشاف

حکومتی اعداد وشمار کے مطابق 22 مارچ تک ایکس ای کے 637 کیسز سامنے آئے۔ برطانوی ہیلتھ سیکیورٹی ایجنسی کے مطابق 16 مارچ تک اس کی نمو، BA.2 کی نسبت 9.8 فیصد زائد تھی۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا کہ فروری کے بعد انگلینڈ اور ویلز میں کوویڈ سے اموات کی شرح بلند ترین سطح پر پہنچ گئی۔ 25 مارچ کو ختم ہونے والے ہفتہ میں انگلینڈ اور ویلز میں 780 اموات ہوئیں۔ اموات کی یہ تعداد گزشتہ ہفتہ کی نسبت 14 فیصد زائد ہے۔

متعلقہ خبریں