حجاب تنازع:بھارتی ریاست کرناٹک میں صدارتی راج نافذ کرنے کا مطالبہ

بھارت میں حجاب کیس: طلبا یونیفارم پر عملدرآمد کریں، ہائیکورٹ کا حکم

 بھارت میں مسلم فورم نے فرقہ وارانہ فسادات کے باعث ریاست کرناٹک میں صدارتی راج کا مطالبہ کردیا۔

بھارتی ریاست کرناٹک میں حجاب پر پابندی اور فرقہ وارانہ فسادات کا معاملہ سنگین صورتحال اختیار کرگیا۔ مسلم فورم  کی جانب سے ریاست کرناٹک میں صدارتی راج نافذ کرنے کا مطالبہ کردیا گیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق مسلم فورم نے بھارت کے صدر رام ناتھ کووند کو خط لکھ دیا۔خط میں ہندو انتہا پسند جماعتوں کی جانب سے نفرت انگیز بیانات کی نشاندہی کی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:بھارت میں مذہبی تہوار پر ہندوانتہا پسند آپے سے باہر، مساجد میں توڑ پھوڑ

خط میں لکھا گیا ہے کہ ریاست کرناٹک میں مسلمان مخالف جذبات کو ہوا دی جارہی ہے۔ریاست دو ماہ سے نفرت انگیز واقعات تیزی سے بڑھ رہے ہیں۔ کرناٹک میں صدارتی راج نافذ کیا جائے۔

واضح رہے کہ ریاست کرناٹک میں مسلم طالبات کے لیے تعلیمی اداروں میں حجاب پہننے پر پابندی لگائے جانے کے بعد سے حالات کشیدہ ہیں ۔ گزشتہ دنوں  ریاست کرناٹک، گجرات  اور اتر پردیش پر رام نوامی تہوار کے دوران  ہندو انتہا پسندوں نے مساجد اور مسلمانوں کے گھر پر حملے بھی کیے۔

متعلقہ خبریں