اقتصادی رابطہ کمیٹی: دو لاکھ میٹرک ٹن یوریا درآمد کرنے کی اجازت دے دی

اقتصادی رابطہ کمیٹی: دو لاکھ میٹرک ٹن یوریا درآمد کرنے کی اجازت دے دی

اسلام آباد: اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) نے ٹی سی پی کو مؤخر ادائیگی پر دو لاکھ میٹرک ٹن یوریا درآمد کرنے کی اجازت دے دی ہے۔

پیٹرولیم قیمتوں کا کیا کروں؟ شہباز شریف کا مولانا اور زرداری سے مشورہ

ہم نیوز کے مطابق ای سی سی نے یہ اجازت وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کی زیر صدارت منعقدہ اجلاس میں دی۔اجلاس میں وفاقی وزرا، وفاقی وزرائے مملکت، وفاقی سیکریٹریز اور متعلقہ اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔

وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کی زیر صدارت منعقدہ اجلاس میں پیٹرولیم ڈویژن کی آئل مارکیٹنگ کمپنیوں اور ریفائنریز کے پرائس ڈیفریشیل کلیمز کی ادائیگی کی سمری پر غور کیا گیا۔

اجلاس میں ای سی سی نے سمری کی تحت 55 ارب روپے کی سپلیمنٹری گرانٹ کی منظوری دے دی، سپلنٹری گرانٹ مئی 2022 کے پہلے 15 دن کے لیے منظور کی گئی۔

ای سی سی اجلاس: یوریا کی درآمدی لاگت کے تخمینے کی منظوری

ہم نیوز کے مطابق ای سی سی کے اجلاس میں وفاقی وزارت صنعت و پیداوار نے یوریا کی درآمد سے متعلق سمری پیش کی جس پر ٹی سی پی کو مؤخر ادائیگی پر دو لاکھ میٹرک ٹن یوریا درآمد کرنے کی اجازت دے دی گئی۔

متعلقہ خبریں