حمزہ شہباز کو فوری استعفیٰ نہ دینے کا مشورہ: پنجاب میں آئینی بحران شدید ہوگیا

پنجاب میں صوبائی کابینہ کی تشکیل کا پہلا مرحلہ: 7 وزرا حلف اٹھائیں گے

لاہور: آئینی و قانونی ماہرین نے وزیراعلیٰ حمزہ شہباز کو فوری طور پر اپنے منصب سے استعفیٰ نہ دینے کا مشورہ دے دیا ہے جب کہ صوبہ پنجاب میں آئینی بحران شدت اختیار کر گیا ہے۔

منحرف اراکین کا ووٹ شمار نہیں ہو گا عدالتی رائے، تاحیات نااہلی پر خاموشی

ہم نیوز نے اس ضمن میں ذمہ دار ذرائع سے بتایا ہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب کو آئینی و قانونی ماہرین نے مشورہ دیا ہے کہ فوری طور پر اپنے منصب سے استعفیٰ نہ دیں۔ ماہرین کی آرا کے مطابق پہلے سپریم کورٹ کے فیصلے کی کاپی آنے دیں پھر فیصلہ کریں۔

ذرائع کے مطابق حمزہ شہباز کو دی جانے والی بریفنگ میں کہا گیا ہے کہ گورنر کے پاس آئینی اختیار ہے کہ وہ اعتماد کا ووٹ لینے کے لیے کہہ سکتے ہیں لیکن قائم مقام گورنر کا عہدہ سنبھالتے ہی اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کے خلاف تحریک عدم اعتماد آجائے گی۔

وزیر اعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے پریس کانفرنس ملتوی کردی: قانونی ٹیم طلب

ہم نیوز کو ذرائع نے بتایا ہے کہ ماہرین کی آرا کے تحت وزیراعلی ٰکے خلاف اعتماد کے ووٹ یا عدالتی فیصلے پر عمل کرنے میں وقت درکار ہو گا۔

لوٹوں کیخلاف فیصلہ دینے پر سپریم کورٹ کا شکریہ! عمران خان

واضح رہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے سپریم کورٹ آف پاکستان کی جانب سے سنائے جانے والے فیصلے کے فوری بعد بلائی گئی پریس کانفرنس ملتوی کردی تھی حالانکہ اس سے خطاب کے لیے وہ بطور خاص مری سے لاہور پہنچے تھے۔

متعلقہ خبریں