شیریں مزاری کے خلاف مقدمہ بزدار حکومت میں بنایا گیا،گرفتاری سے خوشی نہیں ہوئی، مریم نواز

فتنہ دوبارہ سر اٹھانے کی کوشش کر رہا ہے، پاکستان کو ترقی کے راستے پر واپس لانا ہے: مریم نواز

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ شیریں مزاری کے خلاف مقدمہ بزدار حکومت میں بنایا گیا تھا، ان کی گرفتاری پر خوشی نہیں ہوئی۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی شیریں مزاری کی گرفتاری پر عورت کارڈ کھیل رہی، اینٹی کرپشن نے کسی وجہ سے انہیں گرفتار کیا ہو گا۔ پی ٹی آئی عورت کارڈ کی طرف مت آئے، کیونکہ مجھے بھی گرفتار کیا گیا تھا شیریں پر تو سنگین الزام ہے میرے پر تو کوئی الزام نہیں تھا۔

انہوں نے کہا کہ میں نے کبھی مظلومیت کارڈ نہیں کھیلا، مجھے نیب نے اپنے والد نواز شریف کے سامنے گرفتار کیا گیا جس پر نواز شریف نے کہا تھا کہ صبر رکھو وقت ایک جیسا نہیں رکھتا۔

مریم نواز نے کہا کہ شیریں مزاری کو خاتون پولیس نے گرفتار کیا جب کہ مجھے مرد پولیس اہلکاروں نے گرفتار کیا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ نیب نے میرے ساتھ بہت برا سلوک کیا، یہ رات کو بارہ بجے میرے کمرے پر دھاوا بولتے تھے اور میری ویڈیو بناتے تھے۔

انہوں  نے کہا کہ شہبازشریف نے جو کراچی میں گفتگو کی چار سال ایسی گفتگو سننے کو کان ترس گئے تھے،  چار سال سے انتقام انتقام انتقام کے الزامات کے علاوہ کوئی بات نہیں سنی ، پاکستان آج معاشی طور پر وینٹی لیٹر پر ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ چار سال جو پاکستان کے ساتھ کیا گیا ملک اس کا خمیازہ بھگت رہا ہے ، شہبازشریف نے پنجاب کی تقدیر بدلی ہے۔

مسلم لیگ ن کی نائب صدر نے کہا کہ شیریں مزاری کو مقدمات کا سامنا کرنا چاہیے، اگر وہ بے قصور ثابت ہوئیں تو سب سے پہلے مریم نواز ان کے ساتھ کھڑی ہو گی۔

انہوں نے کہا کہ آپ کہتے ہیں رات کو عدالتیں کیوں کھلی، کیونکہ آپ نے آئین توڑا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ ابھی بھی لاڈلہ ہے، نواز شریف نے اگر اداروں پر کبھی تنقید کی تو وہ تعمیری تھی لیکن نواز شریف اس نظام کا لاڈلہ نہیں بلکہ عوام کا لاڈلہ ہے۔ یہ اس کو نکالتے ہیں مگر عوام اسے واپس لے آتی ہے۔

مریم نواز نے کہا کہ عمران خان نے جس طرح آئین کو روندھا، اس کا صدر اور گورنر پنجاب آج تک آئین کا حلیہ بگاڑتے آ رہے ہیں لیکن ان کے خلاف کچھ نہیں کیا جا رہا۔

رہنما مسلم لیگ ن نے کہا کہ ن لیگ چاہتے ہوئے بھی لوڈشیڈنگ ختم نہیں کر پا رہی، اس کی وجہ یہ ہے کہ گزشتہ حکومت نے پلانٹس بند رکھے گئے، ان کی ادائیگیاں نہیں کی گئی۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان میرے والد کی عمر کے ہیں اور میں ان کی بیٹی کی عمر کی ہوں، میں ان کا نام لینا پسند نہیں کرتی، ان سے بہتر اخلاق کی توقع نہیں کی جا سکتی، ایسے شخص کو تو میں مڑ کر بھی نہ دیکھوں!

مریم نواز نے کہا کہ عمران خان نے کل میرے پر نہیں بلکہ پاکستان کی ماں بیٹی، بہنوں اور حملہ کیا ہے۔ میرے پاس جواب دینے کو بہت کچھ ہے لیکن میں نواز شریف کی بیٹی ہوں میرے پاس سیاسی مواد اتنا ہے کہ مجھے ذاتی حملے کرنے کی ضرورت نہیں۔

انہوں نے کہا کہ بطور ماں مجھے فکر ہے کہ جو بچے جلسے میں کھڑے تھے عمران خان نے انہیں کیا پیغام دیا کہ اپنے اردگرد کھڑی ماں بہنوں کو ایسی نظر سے دیکھو۔

متعلقہ خبریں