پاکستان کے دو کوہ پیماوں نے دنیا کی پانچویں بلند ترین چوٹی سر کر لی

پاکستان کے 2 کوہ پیماوں سرباز علی اور شہروز کاشف نے دنیا کی پانچویں بلند ترین چوٹی ماونٹ مکالو کو سر کر لیا۔

شہروز کاشف ٹاپ 5 بلند ترین چوٹیاں سر کرنے والے دنیا کے کم عمر ترین کوہ پیما بن گئے۔20سالہ شہروز کاشف ماونٹ مکالو سر کرنے والے کم عمر ترین پاکستانی بھی ہیں۔

وہ 8 ہزار میٹر سے بلند 14 میں سے مجموعی طور  پر 7 چوٹیوں کو سر کر چکے ہیں۔نوجوان کوہ پیما بلند ترین 7 چوٹیاں سر کرنے والے تیسرے پاکستانی ہیں۔ ان سے پہلے محمد علی سدپارہ اور سرِباز خان یہ کارنامہ انجام دے چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:پاکستانی کوہ پیما عبدالجوشی بلند ترین چوٹی ماؤنٹ ایوریسٹ کو سر کرنے میں کامیاب

سرباز علی خان نے 8 ہزار میٹر سے بلند دنیا کی 14 میں سے گیارہویں چوٹی  کر لیا ہے۔  ان کے لیے بلند ترین 14 چوٹیوں میں سے گیشربرم ون، شیش پنمگا اور چو ایو کو سر کرنا باقی رہ گیا ہے۔ سرباز خان  وہ پہلے پاکستانی کوہ پیما ہیں جو8 ہزار میٹر سے بلند11 چوٹیاں سر کر چکے ہیں۔

واضح رہے کہ  کوہ ہمالیہ کی ماونٹ مکالو  8463 میٹر بلند چوٹی  ہے۔ یہ چوٹی نیپال اورتبت کر سرحدی علاقے میں واقع ہے۔ اس چوٹی کی ساخت چاروں طرف سے پرامڈ کی طرح ہے۔

 

متعلقہ خبریں