گرفتاریاں ہوں نا رکاوٹیں، لانگ مارچ کی اجازت دی جائے،پی ٹی آئی کا سپریم کورٹ سے رجوع

 تحریک انصاف نے لانگ مارچ کی اجازت  دیے جانے سے متعلق درخواست سپریم کورٹ میں جمع کروادی۔

تحریک انصاف نے لانگ مارچ سے متعلق  درخواست عدالت عظمیٰ  میں دائر کر دی۔ درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ وفاقی اور پنجاب حکومت کو احتجاج کیلئے اجازت دینے کا حکم دیا جائے۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ احتجاج کے دوران کسی کارکن کو گرفتار نہ کیا جائے۔احتجاج کے راستے میں رکاوٹیں حائل نہ کی جائیں۔وفاقی اور پنجاب حکومت کو تشدد اور طاقت کے استعمال سے روکا جائے۔

یہ بھی پڑھیں: عمران خان جو کر رہے ہیں، فساد ہے، اس کو روکنا جہاد ہے، نیا ردالفساد لانچ کریں گے: مریم نواز

واضح رہے کہ چیئر مین پی ٹی آئی عمران خان نے کہا تھا کہ  احتجاج کاحق لینے سپریم کورٹ جائیں گے۔ انہوں نے گزشتہ روز کہا ہے کہ پُرامن احتجاج کے تحفظ کے لیے سپریم کورٹ رولنگ دے، ورنہ اس بار ہم تیاری کے ساتھ جائیں گے۔

انہوں نے کہا تھا کہ سپریم کورٹ سے رولنگ لے رہے ہیں کہ پر امن احتجاج کا حق ہےکہ نہیں،کس بنیاد پر انہوں نے ہمیں روکا تھا۔ سپریم کورٹ کو کہہ رہا ہوں کہ آپ ہمیں رولنگ دیں۔ ہمیں بتائیں کہ کس بنیاد پہ ہمیں روکا گیا اور انتشار پھیلا یا گیا۔میں نے لوگوں کو احتجاج کے لیے تاریخ دینی ہے آئندہ جب ہم آئیں گے تو ہمیں بتائیں کہ کیا سپریم کورٹ اس طرح کے غیر جمہوری عمل کی اجازت دے گی؟

یہ بھی ہڑھیں:ریاست مخالف لانگ مارچ ہوا تو سختی سے نمٹا جائے گا،وفاقی کابینہ کا فیصلہ

 عمران خان کا کہنا تھا کہ اگر سپریم کورٹ ہمیں تحفظ  دیتی ہے تو ہماری حکمت عملی الگ ہوگی اور اگر ہمیں تحفظ نہیں ملتا تو میں سب کے سامنے کہہ رہاہوں کہ پھر ہماری دوسری حکمت عملی ہوگی اور اس بار تو ہماری تیاری نہیں تھی لیکن اب ہم تیاری کے ساتھ جائیں گے۔ یہ میرے لیے جہاد ہے، امپورٹڈ حکومت کو ہم کسی صورت قبول نہیں کریں گے۔

متعلقہ خبریں