سخت معاشی فیصلے بہتری کیلئے ہیں، محمد زبیر: آرام سے بیٹھنا عمران خان کا مزاج نہیں، شبلی فراز

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما محمد زبیر نے کہا ہے کہ بات چیت کے ذریعے ہی فیصلے ہوں گے، ان کے بقول ہم لٹیرے اور ڈاکو ہیں، الیکشن کمیشن کو انتخابات کیلئے ہر وقت تیار رہنا چاہئے۔

غلامی امپورٹڈ حکومت نے قبول کی، سزا عوام بھگت رہے ہیں، پیٹرول کی بوسٹر ڈوز باقی ہے: سینیٹر شہزاد وسیم

ہم نیوز کے پروگرام ’بریکنگ پوائنٹ ود مالک‘ میں گفتگو کرتے ہوئے سابق گورنر سندھ محمد زبیرنے کہا کہ ہم سخت معاشی فیصلے اس لئے کرتے ہیں تا کہ بہتری آئے، حکومت اپنی مدت پوری کرے گی، بین الاقوامی مارکیٹ میں قیمتیں بڑھنے سے تیل کی قیمت بڑھی۔

ایک سوال کے جواب میں محمد زبیر نے کہا کہ عمران خان اور تحریک انصاف احتجاج کر کے تباہی کرنا چاہتے تھے، اکتوبر کی تاریخ کا کیا سیاسی بیک گراونڈ ہے؟ مجھے علم نہیں ہے۔

ن لیگی رہنما محمد زبیر نے کہا کہ اگر آپ نے استعفے دیے ہیں تو اسپیکر کے پاس چلے جائیں، سخت فیصلے کرنے کے بعد عوام کے پاس جوتے کھانے نہیں جا سکتے ہیں۔

پروگرام میں شریک مہمان سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ سیاسی جماعتوں کےساتھ رابطے رکھیں گے، شیخ رشید کی اپنی پارٹی ہے، ملک اس طرح نہیں چلتا جس طرح چلایا جا رہا ہے، ساڑھے 3 سال میں ہم نے بڑا زبردست کام کیا،
یہ حکومت ایک سازش کےتحت آئی ہے اور انتہائی نالائق و نا اہل ہے۔

لوڈ شیڈنگ پر معذرت، کل سے دورانیہ کم ہو گا،شاہد خاقان عباسی

سابق وفاقی وزیر سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ انہوں نے دو ہفتوں میں پیٹرول کی قیمت میں 60 روپے کا اضافہ کیا،
ہم قوم کو ریلیف دینا چاہتے تھے لیکن موجودہ حکومت نے مہنگائی سے عوام کا جینا مشکل کردیا۔

پی ٹی آئی رہنما سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ ایف آئی اے وزیراعظم اور وزیراعلیٰ کی گرفتاری مانگ رہی ہے، ہم اس اسمبلی کا حصہ بننا نہیں چاہتے، حکومت کوشش کررہی ہے کہ کسی طریقے سے سسٹم کو سبوتاژ کرے، ہمارے ساتھ پور ے پاکستان سے لوگ آئے، آرام سے بیٹھنا عمران خان کے مزاج میں نہیں ہے۔

گلی گلی سے نکلنے والا انقلاب آج ضمانتیں کرا رہا،مریم نواز

سابق وفاقی وزیر سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ جس سازش سے یہ لوگ آئے وہ ان کی نالائقی کو ظاہر کرتا ہے، اس وقت ملک میں سیاسی بحران ہے،پارلیمنٹ مکمل نہیں ہے، پارلیمنٹ میں اپوزیشن نہیں ہے، ان کے حکومت میں آنے کا مقصد این آر او لینا تھا۔

متعلقہ خبریں