بجٹ اجلاس، ہائر ایجوکیشن کمیشن کیلئے 65 ارب روپے مختص

فوٹو: فائل

اسلام آباد: نئے مال سال 23-2022 کے بجٹ میں ہائر ایجوکیشن کمیشن کے لیے 65 ارب روپے مختص کر دیئے گئے۔

قومی اسمبلی میں پیش کردہ نئے مالی سال 23-2022 کے بجٹ میں ہائر ایجوکیشن (ایچ ای سی) کے ترقیاتی منصوبوں کے لیے 44 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔ ایچ ای سی کے بجٹ میں بلوچستان اور ضم شدہ اضلاع کے لیے 5 ہزار وظائف شامل ہیں جبکہ بلوچستان کے ساحلی علاقوں کے لیے الگ اسکالر شپ اسکیم بھی شامل ہے۔

ملک بھر میں کے طلبا کو ایک لاکھ لیپ ٹاپ آسان اقساط پر فراہم کیے جائیں گے اور ایچ ای سی کے لیے 65 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: بجٹ پیش، ملازمین کی تنخواہوں میں 15 فیصد اضافہ، انکم ٹیکس چھوٹ کی حد بڑھا دی گئی

وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا کہ شمالی وزیرستان میں بھی ایک یونیورسٹی بنانے کا آغاز ہو گا اور نیشنل یوتھ کمیشن کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ نوجوانوں میں کاروبار کے فروغ کے لیے 5 لاکھ تک بلاسود قرضے دیئے جانے کی اسکیم کا اجرا کیا جائے گا اور اسکیم کے تحت نوجوانوں کو ڈھائی کروڑ تک آسان شرائط پر قرضے فراہم کیے جائیں گے۔

نوجوانوں کی صلاحیتوں کی حوصلہ افرائی کے لیے اینویشن لیگ کا آغاز کیا جائے گا۔ 11 سے 25 سال کی عمر کے نوجوانوں کے لیے ٹیلنٹ ہنٹ اور اسپورٹس ڈرائیو پروگرام بھی تشکیل دیا گیا ہے۔ یوتھ ایمپلائمنٹ پالیسی کے تحت 20 لاکھ سے زائد روزگار کے مواقع نکالے جائیں گے۔

متعلقہ خبریں