ایک سے ڈیڑھ دن میں آئی ایم ایف پروگرام بحال ہو جائے گا،مفتاح اسماعیل

ملک کو دیوالیہ ہونے سے بچا لیا،مشکل یہ ہے، مستحکم گروتھ کیسے لائیں؟ مفتاح اسماعیل

فائل فوٹو

وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ ایک سے ڈیڑھ دن میں آئی ایم ایف پروگرام بحال ہو جائے گا۔

صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف کا تنخواہ بڑھانے سے کوئی تعلق نہیں ہے، صاحب ثروت لوگوں پر ٹیکس لگے گا جب کہ غریب طبقے کو ریلیف دیا جائے گا۔

مزید مشکل فیصلے لینے ہوئے تو لیں گے دوسرا کوئی راستہ نہیں، مفتاح اسماعیل

چند روز قبل اپنے بیان میں مفتاح اسماعیل نے کہا تھا کہ خواہش ہے ملک میں کسی کو بھی 2 ہزار وظیفے کی ضرورت نہ پڑے۔

انہوں نے کہا کہ مشکل وقت میں بجٹ پیش کیا گیا کیونکہ ماضی میں اتنا معاشی مشکل نہیں دیکھا جتنا آج دیکھ رہا ہوں۔ ایک ہزار 100 ارب روپے بجلی کی مد سبسڈی دی گئی اور 500 ارب روپے کا سرکلر ڈیٹ دیا۔ 16 روپے فی یونٹ حکومت دے رہی ہے لیکن یہ بھی عوام کے ہی پیسے ہیں۔

انہوں ںے کہا کہ رواں مالی سال شعبہ گیس میں 400 ارب روپے کی سبسڈی دی گئی اور 30، 35 روپے بجلی کا یونٹ بنا رہے ہیں لیکن اگر باقی ممالک میں سستی گیس مل رہی ہے تو ہم مہنگی نہیں دے سکتے۔ ملک میں 200 ملین ڈالر کی گیس کا پتہ ہی نہیں کہاں گئی۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ ملکی انتظامی امور ٹھیک کرنا ضروری ہے ورنہ یہ ملک چلانا مشکل ہے۔ 2 اعشاریہ 4 ارب کی گیس ہم ہوا میں اڑا دیتے ہیں۔ پاکستان باوقار اور نیوکلیئر پاور ملک ہے، اس لیے ہمیں معیشت سنبھالنا ہو گی۔

متعلقہ خبریں