عمران خان اور پی ٹی آئی رہنماؤں کے سازشی بیانات کی تحقیقات کیلئے کمیشن قائم کیا جائے، سپریم کورٹ سے استدعا

فائل فوٹو

اسلام آباد: سپریم کورٹ آف پاکستان سے استدعا کی گئی ہے کہ عمران خان سمیت پی ٹی آئی رہنماؤں کو اداروں کے خلاف بیان بازی سے روکا جائے اور پی ٹی آئی رہنماؤں کے سازشی بیانات کی تحقیقات کے لیے کمیشن قائم کیا جائے۔

ہم 2جولائی کو احتجاج کریں گے، کراچی، لاہور اور پشاور سمیت دیگر شہروں میں بھی لوگ نکلیں: عمران خان

ہم نیوز کے مطابق عدالت عظمیٰ سے یہ استدعا قوسین فیصل ایڈووکیٹ کی جانب سے دائر درخواست میں کی گئی ہے۔

سابق وزیراعظم عمران خان سمیت پی ٹی آئی کے دیگر رہنماؤں کے خلاف دائر ایک اور درخواست میں چیئرمین پاکستان تحریک انصاف، سابق وفاقی وزرا فواد چودھری اور شیریں مزاری سمیت دیگر کو فریق بنایا گیا ہے۔

سپریم کورٹ میں دائر درخواست میں الیکشن کمیشن آف پاکستان، پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) اور وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) کو بھی فریق بنایا گیا ہے۔

دائر درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ اقتدار جانے کے ساتھ ہی عمران خان نے ملک کو کمزور کرنے کی تحریک شروع کی، پی ٹی آئی رہنما عدلیہ، فوج اور الیکشن کمیشن سمیت دیگر اداروں پر الزامات لگا رہے ہیں۔

عمران خان نفرتوں کا سوداگر ہے، بیرونی ممالک سے اداروں پر اٹیک کروا رہا ہے: خواجہ آصف

ہم نیوز کے مطابق قوسین فیصل ایڈووکیٹ نے سپریم کورٹ میں دائر درخواست میں کہا ہے کہ تحریک انصاف کے ہتھکنڈے ملکی سالمیت اور بقا کے لیے خطرہ ہیں، ملکی ادارے کمزور ہوں گے تو بیرونی سازشیں کامیاب ہوسکتی ہیں۔

متعلقہ خبریں