ہم غریب کو ریلیف دیتے ہیں تو پی ٹی آئی دیوار بن جاتی ہے، وزیر خزانہ

اسلام آباد: وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ ہم غریب کو ریلیف دیتے ہیں تو پی ٹی آئی آگے دیوار بن جاتی ہے۔

وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ معیشت قابو میں آ گئی ہے۔ ہم نے بجٹ میں امیر لوگوں سے قربانی مانگی اور ملک ڈیفالٹ ہونے سے بچا لیا گیا۔ ہم نے بہت مناسب بجٹ پیش کیا۔

انہوں نے کہا کہ چین نے مشکل میں ہماری مالی مدد کی ہے اور جو کہہ رہے ہیں کہ معیشت تباہ ہو گئی ہے ایسا کچھ نہیں۔ ملک میں کچھ اشیا کی قیمتوں میں کمی آنا شروع ہو گئی ہے۔ گھی، چینی اور آٹے کی قیمتوں میں نمایاں کمی آئے گی اور آئی ایم ایف سے جلد بہتر معاملات طے پا جائیں گے۔

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ لوڈشیڈنگ کی وجہ بھی پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی نااہلی تھی لیکن ہم نے چیلنجز کے باوجود معیشت کو دیوالیہ ہونے سے بچا لیا ہے اور استحکام کی طرف چلے گئے ہیں۔ بین الاقوامی سطح پر تیل کی قیمت 100 ڈالر فی بیرل تک آ گئی۔

انہوں نے کہا کہ معیشت ہمارے کنٹرول میں ہے اس لیے عوام چہ مگوئیوں پر کان نہ دھریں۔ بہت جلد گھی 100 اور 150 روپے سستا ہو جائے گا اور تیل کی قیمتوں میں کمی کا فائدہ مناسب وقت پر عوام کو پہنچائیں گے۔ جب ہم آئے تھے تو بجلی کا شارٹ فال ساڑھے 7 ہزار میگاواٹ تھا اور ہم نے فوری ڈھائی ہزار میگاواٹ کی کمی پوری کی۔

یہ بھی پڑھیں: کوشش ہے ملک کو توانائی کے شعبے میں خود کفیل بنائیں، وزیر اعظم

وزیر خزانہ نے کہا کہ ہمیں گزشتہ حکومت کی نااہلیوں کا خمیازہ بھگتنا پڑ رہا ہے اور پی ٹی آئی والے کہتے ہیں بجلی کی کیپسٹی زیادہ ہے جو بےبنیاد بات ہے۔ کاش، کاش، کاش پی ٹی آئی حکومت عقل مندی سے کام لیتی۔

انہوں نے کہا کہ افغانستان، افریقہ اور دیگر ممالک سے کوئلہ آ رہا ہے اور ہم نے جو پلانٹس لگائے تھے وہ بھی پی ٹی آئی دور میں بند تھے۔ بجلی کی کیپسٹی بڑھنے کے ساتھ ساتھ لوڈشیڈنگ میں کمی آئے گی۔

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ پنجاب حکومت اپنے پیسوں سے بجلی پر سبسڈی دے رہی ہے اور پنجاب حکومت غریب کا بوجھ اٹھاتی ہے تو پی ٹی آئی اس اقدام کو چیلنج کرتی ہے جس پر افسوس ہے۔ ہم غریب کو ریلیف دیتے ہیں تو پی ٹی آئی آگے دیوار بن جاتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ لنگر خانے بند نہیں ہوئے ،غلط بیانی سے کام کیوں لے رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں