الیکشن کمیشن حمزہ شہباز کیساتھ ملکر لوٹوں کو جتوانے کی کوشش کررہا، عمران خان

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا کہ الیکشن کمیشن حمزہ شہبازکےساتھ ملکر لوٹوں کو جتوانے کی کوشش کررہا ہے۔

لاہور کے حلقے پی پی 158 کے علاقے دھرمپورہ میں انتخابی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نوجوانوں یہ الیکشن ہم نے جیتنا ہے،یہ کوئی اقتدار کی نہیں بلکہ ہم سب کی جنگ ہے۔

اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ لوٹوں کو ہم نے شکست دینی ہے، شہبازشریف اور حمزہ شہباز کے ہوتے ہوئے اس ملک کا کوئی مستقبل نہیں،نوجوان یہ الیکشن ہم نے جیتنا ہے۔ یہ لوگ30سال سے ملک پر ڈاکے مار رہے ہیں، ہم نے ان غداروں کا مقابلہ کرنا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ای وی ایم مشین استعمال سے دھاندلی ختم ہو سکتی ہے، بھارت اور ایران میں ای وی ایم مشین استعمال ہو رہی ہے، آپ نے آخری گیند تک مقابلہ کرنا ہے ہار نہیں ماننی، اس الیکشن میں خواتین کا بہت بڑا کردار ہوگا۔

پی ٹی آئی چیئر مین کا کہنا تھا کہ یہ سیاست نہیں جہاد ہے، ملک کی حقیقی آزادی کیلئے جدوجہد کرنا جہاد ہے، کوئی طاقت اس تبدیلی کو روک نہیں سکتی، یہ لوٹے پیسے کے پجاری ہیں ان کو ہم نے شکست دینی ہے۔

اس سے پہلے شیخوپورہ میں ضمنی انتخابات کے حوالے سے پی ٹی آئی کے زیر اہتمام منعقدہ جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ لوٹوں کے اوپر پیسے خرچ کیے جا رہے ہیں، الیکشن کمیشن حمزہ ککڑی سے مل کر لوٹے جتانے کی کوشش کر رہا ہے۔

غریب کی مفت بجلی چھین کر فتنہ خان کی کس انا کو تسکین پہنچی؟ مریم نواز

سابق وزیراعظم نے کہا کہ مہنگائی کے باعث کسان بہت پریشان ہے، ڈیزل کی قیمت میں اضافے کی وجہ سے صنعت متاثر ہو رہی ہے، تحریک انصاف پاکستان کی سب سے بڑی جماعت بن چکی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ میرا خاندان سیاست میں نہیں تھا، میں گھرسے اکیلا نکلا تھا آہستہ آہستہ قافلہ بڑھتا گیا، تحریک انصاف واحد جماعت ہے جو سارے پاکستان میں ہے، مجمع دیکھ کر اپنے امیدوار کو مبارک دیتا ہوں وہ الیکشن جیت گئے ہیں، کوئی لوٹا آپ کا مقابلہ نہیں کر سکتا، کسی رنگ کا لوٹا اس جنون کا مقابلہ نہیں کر سکتا، لوٹوں پر بڑے نوٹ خرچ کیے جا رہے ہیں۔

جو بات کرنا چاہتا ہے تحریک انصاف کے دروازے کھلے ہیں، ملک کی فکر ہے، عمران خان

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ حمزہ شہباز! جو مرضی کر لو یہ الیکشن نہیں جیت سکتے، الیکشن کمیشن پوری طرح جانبدا ر ہے، ٹیم بنا کر میدان میں نکلیں تو کوئی شکست نہیں دے سکتا، یہ دو نظریوں کا مقابلہ ہے، ایک نظریہ پاکستان کا ہے، حقیقی آزادی کی جدوجہد میں ماں اور بہنوں کے ساتھ بچے بھی نکلے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ چین نے 35 سال میں 70 کروڑ افراد کو غربت کی لکیر سے نکال دیا، یہ کشمیریوں کی قربانیوں کو نظر انداز کررہے ہیں، انہیں کسی بھی طرح چوری کا پیسہ چاہیے، پیسے کی خاطر یہ اسرائیل کو بھی تسلیم کرنے کیلئے تیار ہیں، مغربی بینکوں اور آف شور کمپنیوں میں ان کے پیسے پڑے ہیں، لندن میں بڑے محلات ہیں، زرداری اور نواز شریف کے ہوتے ہوئے ہمارے ملک میں ڈرون حملے ہوئے،  ان کی ایک بار بھی جرا ت نہیں ہوئی کہ امریکہ کو ڈرون حملوں سے منع کریں۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ یہ کبھی اپنے مفادات کے خلاف ملک کی خاطر کھڑے نہیں ہوں گے، یہ ہمیشہ قوم کو بھکاری کہیں گے،  ان چوروں کی وجہ سے پاکستان ایک عظیم اور خود دار ملک نہیں بن سکا، میں کشمیریوں کی قربانیوں کو نظر انداز کر کے بھارت سے دوستی نہیں کر سکتا، ہم سب سے دوستی چاہتے ہیں، ہم بھی امریکہ سے اچھے تعلقات چاہتے ہیں مگر غلامی نہیں چاہتے۔

رانا ثنااللہ کیساتھ زیادتی ہوئی ان پر کیس نہیں بننا چاہئے تھا، فواد چودھری

انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں مجھے جتنی عزت ملی شاید ہی کسی پاکستانی کو ملی ہو، میں بھی چاہتا ہوں کہ ہندوستان سے دوستی ہو لیکن کشمیری کی قربانیوں کی قبرپرہندوستان سے دوستی نہیں کر سکتا، امریکہ کہتا ہے کہ روس نہ جاؤ، امریکہ سے پوچھتا ہوں تم ہو کون مجھے منع کرنے والے؟ ہندوستان امریکہ کا اتحادی ہے۔

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے کہا کہ امریکہ کا اتحادی ہوتے ہوئے ہندوستان روس سے 30 فیصد سستا تیل خرید رہا ہے، یہاں امریکہ کے غلاموں کی جرات نہیں ہے روس سے تیل لینے کی، امریکہ کا نام سن کر ان کی کانپیں ٹانگنے لگ جاتی ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ امریکہ میں کوئی ضمانت پر ہو تو اسے چپڑاسی بھی نہیں رکھتے، یہاں ضمانت پر ہونے والے شخص کو وزیراعظم بنا دیا، امریکہ نے 22 کروڑ عوام کی توہین کی ہے، امریکہ چاہتا ہے یہ لوگ اس کو سلیوٹ کریں، کسی قوم کی اس سے بڑی توہین نہیں ہو سکتی۔

عمران خان کے جہاز کے پائلٹ کو نامعلوم نمبروں سے دھمکیاں، پی ٹی آئی رہنماوں کا دعوی

ہم نیوز کے مطابق سابق وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ جس جس پولیس والے نے تشدد کیا اس کا نام ہم نے نوٹ کیا ہے، آئی جی اور چیف سیکریٹری کان کھول کر سن لو! آپ دونوں کی تقرری میں نے کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ آئی جی پنجاب! سن لو، تمہیں میں نے ایماندار ہونے کی وجہ سے رکھا تھا، یہ پیسے بانٹ رہے ہیں، سب ان سے پیسہ لیں مگر ٹھپہ بلے پر لگائیں، 17 جولائی کو دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا۔

متعلقہ خبریں