سپریم کورٹ: سندھ میں بلدیاتی انتخابات روکنے کی ایم کیو ایم کی استدعا مسترد

ججز کے آئینی حدود سے تجاوز کرنے کے رجحان کو روکنا ہوگا، سپریم کورٹ

 سپریم کورٹ نے ایم کیو ایم کی سندھ میں بلدیاتی انتخابات روکنے کی استدعا مسترد کردی۔

سپریم کورٹ میں سندھ  کے بلدیاتی انتخابات روکنے سے متعلق ایم کیو ایم کی درخواست پر سماعت ہوئی۔چیف جسٹس کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے سندھ میں بلدیاتی انتخابات ملتوی کرنے کی درخواست مسترد کردی۔

سپریم کورٹ  نے سندھ حکومت سے درخواست پر جواب طلب کر لیا۔ وکیل ایم کیو ایم فروغ نسیم نے استدعا کی کہ وفاقی حکومت کو جواب جمع کرانے کا حکم بھی دیا جائے۔چیف جسٹس عمرعطا بندیال نے ریمارکس دیے کہ وفاقی حکومت چاہے تو جواب جمع کرادے۔

ایڈووکیٹ جنرل  سندھ نے سندھ حکومت کی جانب سے تحریری جواب جمع کرانے کیلئے دو ہفتوں کا وقت مانگا۔ جس پر ایم کیو ایم کے وکیل نے دلائل دیے کہ 27 اگست کو لوکل باڈیز الیکشن ہے۔دو ہفتوں کا وقت دیا گیا پھر سندھ حکومت کہے گی پولنگ قریب ہے۔

دلائل کے بعد عدالت نے سندھ حکومت کو دو ہفتوں کی مہلت دینے سے انکار کرتے ہوئے 4 اگست تک جواب جمع کرانے کا حکم دیدیا۔

متعلقہ خبریں