وفاق نے بارش اور سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں ایمرجنسی نافذ کر دی

وزیراعظم کا سیلاب و بارش سے جاں بحق افراد کے لواحقین کیلئے امدادی پیکج کا اعلان

وفاق نے بارش اور سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں ایمرجنسی نافذ کر دی۔

وزیراعظم شہباز شریف کی جانب سے وزراتِ خزانہ کو فوری طور پر 5 ارب روپے این ڈی ایم اے کو جاری کرنے کی ہدایت کی گئی۔

وزیراعظم نے کہا ہے کہ سیلاب متاثرین کی ریسکیو، ریلیف اور بحالی ایک قومی فریضہ ہے، ہمیں اپنے جماعتی مفادات سے بالا تر ہو کر عوام کی مدد کرنی ہے،ہم سیاست بعد میں کریں گے۔ ابھی اُن لوگوں کی مشکلات کا مداوا کرنے کا وقت ہے جو مشکل میں ہیں۔

شہباز شریف نے کہا کہ سیلاب متاثرہ علاقوں کے دوروں کے دوران میں نے اتحاد اور قومی یگانگت کی بات کی تھی۔

بلوچستان: بارشوں  اور سیلاب سے اموات کی تعداد 166 ہوگئی

وزیراعظم نے ریسکیو اور ریلیف کے کام کو موثر انداز سے سرانجام دینے کیلئے اعلیٰ کی سطح کمیٹی قائم کر دی۔ انہوں نے ہدایت کی کہ کمیٹی آج ہی اپنا اجلاس منعقد کرے۔

شہباز شریف نے کہا کہ کمیٹی وفاقی اور صوبائی اداروں میں کوارڈینیشن کو بہتر کرنے کے لیے اپنی تجاویز پیش کرے، موسمیاتی تبدیلی کے پیشِ نظر وسط مدتی سے طویل مدتی حکمت عملی بنانے کی ضرورت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ صوبائی حکومتیں مستند معلومات پر مبنی رپورٹس وفاقی حکومت کو ارسال کریں،ترقیاتی کاموں کو موسمیاتی تبدیلی کی ترجیحات کے مطابق ڈھالنے کی ضرورت ہے ۔

متعلقہ خبریں