پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کیس: ایف آئی اے نے تحقیقات کا آغاز کردیا

پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کیس: ایف آئی اے نے تحقیقات کا آغاز کردیا

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف ممنوعہ فنڈنگ کیس کے حوالے سے وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) نے  تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔

پی ٹی آئی کا حکومت کو ایک ماہ میں الیکشن کی تاریخ دینے کا الٹی میٹم

ذرائع کے مطابق ابتدائی تحقیقات میں الیکشن کمیشن کی رپورٹ میں نامزد 4 ملازمین کو طلب کیا گیا جن میں سے 3 ملازمین محمد رفیق، طاہر اقبال اور محمد ارشد نے اپنے ابتدائی بیانات قلمبند کرا دیئے ہیں۔

ذمہ دار ذرائع کے مطابق ملازمین میں عمران خان کے پرسنل سیکریٹری اور پارٹی کا جنرل منیجر فنانس بھی شامل ہیں۔

محمد ارشد نے کہا کہ فنڈنگ کون کہاں سے بھجواتا تھا اس بارے میں کچھ علم نہیں ہے جبکہ محمد رفیق نے کہا کہ رقم کس مقصد کے لیے خرچ ہوئی اس بارے میں علم نہیں ہے۔ میرے سے دستخط شدہ بلینک چیک پی ٹی آئی فنانس ڈیپارٹمنٹ لے لیتا تھا۔

طاہر اقبال نے کہا کہ اکاؤنٹس میں رقم کیش یا بذریعہ چیک پارٹی کے فنانس مینجر کو دی جاتی تھی۔

پی ٹی آئی نے چیف الیکشن کمشنر کیخلاف ریفرنس واپس لے لیا

ہم نیوز نے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ ممنوعہ فنڈنگ و دیگر اکاؤنٹ کے علاوہ ملازمین کے سیلری اکاؤنٹ میں بھی آتی رہی۔

متعلقہ خبریں