’’ہمت سے کام لینا ہے‘‘وزیر اعظم کا دورہ سجاول،سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا فضائی جائزہ

وزیر اعظم شہباز شریف  نے دورہ سجاول میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا فضائی جائزہ لیا۔

وزیر اعظم شہباز شریف کے دورہ سجاول کے موقع پروزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ بھی وزیراعظم کے ہمراہ تھے۔ وزیر اعظم کو سیلاب متاثرہ علاقوں میں ہونے والے امدادی کاموں پر بریفنگ دی گئی۔

چیف سیکریٹری سندھ اور ڈائریکٹر جنرل این ڈی ایم اے  نے وزیر اعظم اوروزیراعلیٰ سندھ کو بریفنگ دی ۔ بریفنگ میں بتایا گیا کہ سیلاب متاثرین کی ہر ممکن مدد کی جارہی ہے ۔

یہ بھی پڑھیں:ملک میں سیلاب سے 900 ارب روپے کے نقصانات کا تخمینہ

بریفنگ کے مطابق سیلاب سے فصلیں بڑی سطح پر تباہ ہوئی ہیں۔سیلاب سے کئی گھر تباہ،رابطہ سڑکیں ،عام روڈز اور پل شدید متاثر ہوئے ۔

وزیراعظم اوروزیراعلیٰ سندھ کو سجاول میں بجلی معطلی پر اور بحالی کے امکانات پر بھی بریفنگ دی گئی۔وزیراعظم  نے  متعلقہ حکام کو متاثرین کو امدا دکی بحالی میں تاخیر نہ کرنے کی ہدایت کی۔

وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ  نے کہا ہے کہ ہم سب کے ساتھ ملکر کام کریں گے ،متاثرین کی دادرسی کریں گے۔

اس موقع پر وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ سوات اور کالام میں سیلابی ریلے سے ہوٹل،گھر ،عمارتیں اور مکانات تباہ ہوئے ہیں۔امدادی کام تیزی سے جاری ہیں ،کوشش ہے متاثرین کی بروقت مدد کریں۔

ان کا کہنا ہے کہ سندھ میں پانی چاروں طرف پھیلاہوا ہے ،کوئی جگہ خشک نہیں۔ خرم دستگیر بجلی کے مسئلے کے حل تک سندھ میں ہی رہیں گے۔متاثرین سیلاب کے لیے ہیلی کاپٹرز اور کشتیو ں کے ذریعے امداد فراہم کررہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:ملک بھر میں سیلاب سے تباہی،اموات کی تعداد982 ہوگئی

انہوں نے کہاہے کہ شمالی علاقوں میں بھی سیلاب اور بارشوں سے بڑی سطح پر نقصانات ہوئے ہیں۔سندھ کے متاثرہ علاقوں کے لیے گزشتہ روز گرانٹ کااعلان کیا ۔

ان کا کہنا ہے کہ سکھر اور شدیدمتاثرہ علاقوں میں امدادی اور میڈیکل کیمپس کے قیام پر این ڈی ایم اے کےمشکورہیں۔ہمیں ہمت سے کام لینا ہوگا ،مل کر موجودہ صورتحال سے نمٹنا ہوگا۔

متعلقہ خبریں